Saturday , September 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / نظام آباد میں پولیس کی چوکسی، طلایہ گردی میں اضافہ

نظام آباد میں پولیس کی چوکسی، طلایہ گردی میں اضافہ

ضلع ایس پی چندرشیکھر ریڈی کی پولیس عہدیداران کو ہدایت
نظام آباد:18؍ ستمبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)ضلع نظام آباد میں پولیس کی چوکسی میں اضافہ کرتے ہوئے چیک پوسٹ کے قیام کے علاوہ طلائی گردی میں اضافہ کردیا گیا۔دو دن قبل ضلع ورنگل میں پولیس انکائونٹر کے بعد ڈی جی پی انوراگ شرما کے احکامات پر ضلع ایس پی چندر شیکھرریڈی نے چاروں سب ڈیویژن کے پولیس آفیسروں کو ہدایت دیتے ہوئے سخت چوکسی برتنے کی ہدایت دی ۔ اہم شاہرائوں پر چیک پوسٹ قائم کرنے کے علاوہ ضلع کے سرحدپر بھی آنے جانے والی گاڑیوں پر نگاہ رکھتے ہوئے رات کے اوقات میں ناکہ بندی کرتے ہوئے گاڑیوں کی تلاشی کی جارہی ہے۔ ورنگل انکائونٹر کے بعد ضلع میں امکانی کارروائی  کے امکان ظاہر کرتے ہوئے ضلع کے تمام پولیس اسٹیشن علاقوں میں سابق نکسلائٹس پر نگاہ رکھنے کیلئے سادہ لباس میں پولیس عہدیداروں کو مصروف رکھا گیا ہے۔اور حساس مقامات پر نگاہ رکھی گئی ہے۔عیدالاضحی و گنیش تقریب ایک ہی وقت میں ہونے کی وجہ سے پولیس کی جانب سے امن کمیٹیوں کا اجلاس ہر پولیس اسٹیشن میں منعقد کرتے ہوئے مورتیوں کی تنصیب کیلئے اجازت لازمی قرار دیا۔ تاکہ پولیس اسٹیشن کے علاقہ میں مورتیوں کو تنصیب کیا گیا پولیس کو آسانی کے ساتھ تفصیلات حاصل ہوسکے ۔ ضلع پولیس کی چوکسی اور طلائی گردی میں اچانک اضافہ کے بارے میں ضلع ایس پی چندر شیکھر ریڈی سے دریافت کرنے پر بتایا کہ گنیش، بقرعید کے پرُ امن انعقاد کیلئے پولیس کی جانب سے بڑے پیمانے پر اقدامات کئے جارہے ہیںاور چیک پوسٹ کے قیام کی اعلیٰ عہدیداروں کی ہدایت پر اقدامات کئے جارہے ہیں۔ ورنگل انکائونٹر کا اثر ضلع میں کچھ بھی نہیں اور ضلع میں نکسلائٹس کی سرگرمیاں مکمل طور پر ٹھپ ہوگئی ہے۔ سابق نکسلائٹس پر نظر رکھی گئی ہے ۔ امن و ضبط کی برقراری کیلئے پولیس سے تعاون کرنے عوام سے پرُ زور اپیل کی ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT