Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / نظام فیملی اخراجات پرورش اور مہر کیلئے ہائی کورٹ سے رجوع

نظام فیملی اخراجات پرورش اور مہر کیلئے ہائی کورٹ سے رجوع

آصف ثامن نواب میر برکت علی خاں کی شریک حیات اور دختر انصاف کیلئے کوشاں
حیدرآباد ۔ 11۔ اپریل (سیاست نیوز) آصف ثامن نواب میر برکت علی خاں کی شریک حیات اور دختر نے انصاف کیلئے حیدرآباد ہائی کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا ۔ سلطنت آصفیہ کے نمائندہ نواب برکت علی خاں المعروف مکرم جاہ بہادر نے بتایا جاتاہے کہ 5 شادیاں کی ہیں اور ان دنوں ترکی میں مقیم ہیں۔ نظام فیملی میں اخراجات پرورش اور مہر کیلئے قانونی لڑائی تلنگانہ ہائی کورٹ تک پہنچ گئی جب پرنسس منولیا اور ان کی دختر نیلوفر نے نواب مکرم جاہ بہادر سے اخراجات پرورش اور مہر کی ادائیگی کا مطالبہ کیا ہے ۔ جسٹس سی وی ناگرجنا ریڈی اور جسٹس رجنی پر مشتمل ڈیویژن بنچ نے ماں اور بیٹی کی جانب سے داخل کردہ درخواست کی سماعت کی۔ مقامی عدالت نے نواب مکرم جاہ بہادر کو مہر کی رقم کے طور پر 7 لاکھ امریکی ڈالر اور پرنسس منولیا کے اخراجات پرورش کے طور پر 15000 امریکی ڈالر ادا کرنے کی ہدایت دی تھی۔ دختر نیلوفر کے اخراجات پرورش کے طورپر 5000 امریکی ڈالر کی ادائیگی دی گئی ۔ مقامی عدالت نے تاہم درخواست گزاروں کے دیگر دو مطالبات کو نامنظور کردیا جس میں چریان پیالس اور اوٹی میں موجود ایک بنگلہ پر دعویداری پیش کی تھی۔ نچلی عدالت کے فیصلے کو چیلنج کرتے ہوئے ماں اور بیٹی میں ہائی کورٹ میں اپیل دائر کی ہے ۔ سینئر کونسل ڈی پرکاش ریڈی نے نواب مکرم جاہ بہادر کی جانب سے پیش ہوئے تجویز پیش کی کہ فریقین کے درمیان عدالت کے باہر معاملہ کی یکسوئی کی جاسکتی ہے تاکہ اس دیرینہ قانونی لڑائی کا خاتمہ کیا جاسکے۔ ایک اور سینئر کونسل سی وی موہن ریڈی نے پرنسس منولیا اور ان کی دختر کی جانب سے پیش ہوتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ پرنسس شدید بیماری کا شکار ہیں ، لہذا اس معاملہ کی عاجلانہ یکسوئی کی جائے۔ ڈیویژن بنچ نے فریقین کو ہدایت دی کہ وہ عدالت کے باہر باہمی طور پر مسئلہ کی یکسوئی کیلئے بات چیت کریں۔ عدالت نے مقدمہ کی آئندہ سماعت 27 اپریل کو مقرر کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT