Tuesday , May 23 2017
Home / شہر کی خبریں / نظام کالج گراؤنڈ پر سی پی ایم کو جلسہ عام کی اجازت نہیں

نظام کالج گراؤنڈ پر سی پی ایم کو جلسہ عام کی اجازت نہیں

بی جے پی رکن اسمبلی راجہ سنگھ کے انتباہ کے بعد پولیس کا اقدام
حیدرآباد 13 مارچ (سیاست نیوز) حلقہ گوشہ محل کے رکن اسمبلی ٹی راجہ سنگھ کے انتباہ کے بعد سنٹرل زون پولیس نے 19 مارچ کو نظام کالج گراؤنڈ میں منعقد ہونے والے کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا (مارکسسٹ) کے جلسہ عام کی اجازت نہیں دی۔ اس جلسہ عام میں کیرالا کے چیف منسٹر پنارائی وجین مہمان خصوصی تھے اور پولیس کی اجازت کے لئے سی پی ایم پارٹی نے درخواست داخل کی تھی۔ راجہ سنگھ کو جلسہ عام کی اطلاع ملنے پر اُنھوں نے ڈائرکٹر جنرل آف پولیس تلنگانہ مسٹر انوراگ شرما کو ایک مکتوب روانہ کیا جس میں جلسہ کے انعقاد پر پولیس کو انتباہ دیا تھا۔ بی جے پی رکن اسمبلی نے مکتوب میں ریاستی پولیس سربراہ کو یہ بتایا تھا کہ حالیہ عرصہ میں کیرالا میں آر ایس ایس اور بی جے پی کے کارکنوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے اور اُن کا قتل بھی کیا جارہا ہے۔ چیف منسٹر کیرالا کے ہاتھ آر ایس ایس کارکنوں کے خون سے رنگے ہونے کا انتباہ دیتے ہوئے نظام کالج گراؤنڈ جو گوشہ محل حلقہ اسمبلی میں واقع ہے، جلسہ کی اجازت نہ دینے کی درخواست کی تھی۔ پولیس نے اس بات کی توثیق نہیں کی کہ راجہ سنگھ کے مکتوب پر جلسہ کی اجازت نہیں دی جارہی ہے بلکہ یہ بتایا کہ اسمبلی کے جاریہ بجٹ سیشن کے پیش نظر عمارات اسمبلی کے اندرون دو کیلو میٹر امتناعی احکامات نافذ کئے گئے ہیں جس کے نتیجہ میں کسی بھی قسم کے جلسہ، جلوس یا احتجاجی پروگرام کی اجازت نہیں۔ اسسٹنٹ کمشنر آف پولیس عابڈس مسٹر جے راگھویندرا ریڈی نے بتایا کہ سی پی ایم پارٹی ذمہ داران کو اجازت نہ دینے کی اطلاع دے دی گئی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT