Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / نظام ہشتم کی یوم پیدائش و وفات کو سرکاری سطح پر منعقد کرنے کا مطالبہ

نظام ہشتم کی یوم پیدائش و وفات کو سرکاری سطح پر منعقد کرنے کا مطالبہ

آصف جاہ سابع کی یوم پیدائش تقریب ، کیپٹن ایل پانڈو رنگاریڈی کا بیان
حیدرآباد ۔ 6 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : صدر وائس آف تلنگانہ و ممتاز مورخ کیپٹن لنگالہ پانڈو رنگاریڈی نے حکومت تلنگانہ سے شہر حیدرآباد میں سلطنت آصفیہ کے آخری حکمران آصف جاہ سابع میر عثمان علی خاں بہادر کی یادگاریں قائم کرنے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ حکومت تلنگانہ کو چاہئے کہ وہ نظام ہشتم کی یوم پیدائش اور یوم وفات تقاریب کا سرکاری طور پر انعقاد عمل میں لائے ۔ آج یہاں مسجد جودی کنگ کوٹھی میں حیدرآباد ڈیموکرٹیک و سیکولر الائنس کے زیر اہتمام آصف جاہ سابع کی یوم پیدائش کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیپٹن لنگالہ پانڈو رنگاریڈی نے کہا کہ ریاست حیدرآباد کے انڈین یونین میں شامل ہونے کے بعد بھی آصف جاہ سابع ریاست حیدرآباد کے راج پرمکھ کی حیثیت سے فرائض انجام دیتے رہے اس کے علاوہ آصف جاہ سابع نے چین سے ہندوستان کی جنگ کے موقع پر حکومت ہند کو ہتھیار کی خریدی کے لیے پانچ کنٹل سونے کا عطیہ دیا تھا ۔ کیپٹن نے آندھرائی کمیونسٹوں پر آصف جاہ سابع کی شبہہ کو مشکوک بنانے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ اپنے ذاتی مفادات کو ریاست حیدرآباد کے وسائل پر قبضے کے لیے آندھرائی کمیونسٹوں نے رضاکاروں کے نام پر ایک ایسا اسکرپٹ تیار کیا جو آصف جاہ سابع کے دور حکومت کو سیاہ باب قرار دینے کے لیے کافی تھا مگر حقیقت کچھ اور ہی ہے ۔ یونیورسٹی اسناد میں اردو میں تحریر کردہ جامعہ عثمانیہ نصب کرنے کا مطالبہ بھی کیا ۔ صدر حیدرآباد ڈیموکرٹیک اینڈ سیکولر الائنس ڈاکٹر کولیرو چرنجیوی نے کہا کہ ایچ ڈی ایس اے قطب شاہی اور آصف جاہی یوم پیدائش و برسی تقریب کے انعقاد کے لیے ایک کمیٹی کی تشکیل عمل میں لارہا ہے ۔ جو سرکاری کیلنڈر کی مناسبت سے ہر سال سلطان محمد قلی قطب شاہ اور آصف جاہ سابع کی یوم پیدائش اور وفات کے موقع پر تقاریب کا انعقاد عمل میں لائے گی ۔ ٹی آر ایس قائد سمیریمنی ، نواب مہیب بیگ ، محمد علی کے علاوہ دیگر بھی اس موقع پر موجود تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT