Tuesday , October 24 2017
Home / Top Stories / نعرہ ’بھارت ماتا کی جئے‘ کیخلاف دارالعلوم دیوبند کا فتویٰ

نعرہ ’بھارت ماتا کی جئے‘ کیخلاف دارالعلوم دیوبند کا فتویٰ

سہارنپور ؍لکھنو ، یکم اپریل (سیاست ڈاٹ کام) ’بھارت ماتا کی جئے‘ نعرہ لگانے پر جاری مباحث کے دوران نامور دینی درس گاہ دارالعلوم دیوبند نے آج ایک فتویٰ جاری کرتے ہوئے مسلمانوں سے خواہش کی ہیکہ وہ یہ نعرہ بلند کرنے سے باز رہیں کیونکہ یہ مورتی پوجا کے مترادف ہے جو اسلامی اقدار کے مغائر ہے۔ فتویٰ میں کہا گیا : ’’ہم ہندوستان زندہ باد اور مادرِ وطن جیسے نعرے بلند کرسکتے ہیں کیونکہ ہندوستانی مسلمانوں کو بھی اپنے وطن سے دیگر ابنائے وطن کے مساوی محبت ہے لیکن ہندوستانی مسلمان اپنے وطن کو ’دیوی کی مورتی‘ نہیں سمجھ سکتے اور نہ اس کی تعریف میں نعرے بلند کرسکتے ہیں۔ توحید اسلام کا بنیادی ستون ہے اور صرف خدائے واحد کی عبادت کی اجازت ہے ۔ اس فتویٰ پر حکومتی ردعمل میں مملکتی وزیر سادھوی نرنجن جیوتی نے کہا کہ ’’بھارت ماتا کی جئے‘‘ کا نعرہ لگانے سے انکار مجاہدین آزادی کی توہین کے مترادف ہے۔ تاہم اس موضوع پر بڑھتے تنازعہ کے درمیان ویٹرن بی جے پی لیڈر ایل کے اڈوانی نے گاندھی نگر میں ریمارک کیا ہے کہ ’’میں اس پر تبصرہ نہیں کرنا چاہتا۔ یہ بے معنی تنازعہ ہے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT