Friday , August 18 2017
Home / جرائم و حادثات / نعیم انکاؤنٹر کے باوجود خوفناک ٹولی برقرار

نعیم انکاؤنٹر کے باوجود خوفناک ٹولی برقرار

سات رکن ’ ایکشن ٹیم‘ پولیس کیلئے پراسرار معمہ‘ ماؤنواز بھی شامل
حیدرآباد ۔ /14 اگست (سیاست نیوز) خطرناک گینگسٹر نعیم کو پولیس نے انکاؤنٹر میں ہلاک کرنے میں کامیاب تو ہوگئی ،  لیکن اس کی 7 رکنی ایکشن ٹیم کے اچانک روپوش ہوجانے سے تشویش کا شکار ہوگئی ہے ۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ گینگسٹر کے انکاؤنٹر کے بعد ریاستی انٹلیجنس شعبہ نے نعیم کی ایکشن ٹیم کے ارکان کے خلاف کارروائی کی تیاری کی تھی لیکن یہ ٹیم اچانک روپوش ہونے سے پولیس پریشان نظر آرہی ہے اور ان کی تلاش کیلئے ریاست بھر میں الرٹ جاری کیا گیا ہے ۔ گینگسٹر کی مجرمانہ سرگرمیوں کا پتہ لگانے اور اس سے متعلق تمام تفصیلات حاصل کرنے کیلئے اسپیشل انوسٹی گیشن ٹیم تشکیل دی گئی ہے جس نے اب تک 20 سے زائد افراد کو گرفتار کیا ہے جس میں اس کے رشتہ دار اور ساتھی بھی شامل ہے لیکن 7 رکنی ایکشن ٹیم کا کوئی پتہ نہ چل سکا ۔ یہ ایسی ٹیم ہے جو اپنے گینگسٹر کی ہدایت پر بڑے آپریشنس انجام دیا کرتی تھی ۔ باور کیا جاتا ہے کہ مذکورہ ایکشن ٹیم نے سنسنی خیز قتل کی وارداتوں میں ملوث ہے جس میں سابق ماؤسٹ و ریویولیشنری پروگریسیوں ٹائیگرس (آر پی ڈی) کے پٹولہ گوردھن ریڈی ، کا قتل بھی شامل ہے ۔ نعیم کی زندگی کے دوران یہ ایکشن ٹیم نے حیدرآباد ، سائبر آباد کے علاوہ ضلع نلگنڈہ ، محبوب نگر اور کریم نگر میں بھی قتل و غارت گری کا بازار گرم کیا تھا ۔ پولیس کو اس بات کی تشویش ہے کہ گینگسٹر نعیم کو شاد نگر ٹاؤن میں انکاؤنٹر میں ہلاک کئے جانے کے باوجود ایکشن ٹیم پولیس کے شکنجہ سے ہنوز آزاد ہے ۔ انٹلیجنس کو اس بات کا خدشہ ہے کہ گینگسٹر کی ہلاکت کے بعد ایکشن ٹیم اس کے جرم کی سلطنت کو کو قائم رکھنے میں اہم رول ادا کرسکتی ہے ۔ ذرائع نے بتایا کہ نعیم کے ایکشن ٹیم میں سابقہ ماؤسٹ شیشنا اہمیت کا حامل ہے ۔ اسی طرح دیگر ارکان ضلع محبوب نگر کے چینارام رام راجو ، اچم پیٹ کے جہانگیر ، سدی پیٹ کے ملکاپورم مہیش ، محبوب نگر کے دامودھر ریڈی ، حیدرآباد مشیرآباد کے آصف اور پرانے شہر کے فیروز کیلئے بھی اہمیت رکھتے ہیں ۔ انٹلیجنس اس ایکشن ٹیم کا پتہ لگانے کیلئے اپنی توجہ مرکوز کئے ہوئے اور خصوصی ٹیموں کو ریاست بھر میں پھیلادیا گیا ہے تاکہ ان کی فی الفور گرفتاری عمل میں لائی جاسکے تاکہ پولیس گینگسٹر کی ہلاکت کے انتقامی کارروائی کے طور پر کسی وی آئی پی کو نشانہ نہ بنائے ۔

TOPPOPULARRECENT