Wednesday , July 26 2017
Home / Top Stories / نفرت اور تشدد میں یقین رکھنے والی ذہنیت سے امن عالم کو خطرہ

نفرت اور تشدد میں یقین رکھنے والی ذہنیت سے امن عالم کو خطرہ

بدھ مت کی تعلیمات آج کی دنیا کیلئے بھی مفید۔ کولمبو میں ویساک ڈے تقاریب سے وزیر اعظم مودی کا بحیثیت مہمان خصوصی خطاب

کولمبو 12 مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیر اعظم نریندر مودی نے آج بڑھتے ہوئے تشدد کے خلاف بین الاقوامی برادری کو خبردار کیا ہے اور کہا کہ دنیا کے دیرپا امن کو ایسی ذہنیت سے خطرہ لاحق ہے جو نفرت اور تشدد میں یقین رکھتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دو ممالک یا اقوام کے مابین تصادم سے زیادہ اس ذہنیت سے خطرہ لاحق ہے ۔ کولمبو میں بین الاقوامی ویساک ڈے تقاریب میں مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے مودی نے کہا کہ علاقہ میں نفرت کے نظریات اور اس کے حامیوں نے بات چیت کے امکان کو ہی ختم کردیا ہے اور وہ صرف موت اور تباہی مچانے کیلئے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے علاقہ میں دہشت گردی کی لعنت اس تباہ کن جذبہ کی عکاس ہے ۔ پاکستان کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے یہ بات کہی ۔ پاکستان پر الزام عائد کیا جاتا ہے کہ وہ ہندوستان میں حملوں کی حوصلہ افزائی کرنے کیلئے دہشت گردوں کو تربیت دیتا ہے ۔ مودی نے کہا کہ دیرپا عالمی امن کیلئے آج سب سے بڑا خطرہ دو ممالک کے مابین تصادم سے نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ خطرہ اس ذہنیت ‘ خیالات ‘ ‘ اداروں اور آلات کی وجہ سے جو نفرت اور تشدد میں یقین رکھتے ہیں۔ مودی نے کہا کہ وہ مانتے ہیں کہ بدھ مت کا امن کا قیام آج دنیا بھر میں بڑھتے ہوئے تشدد کا جواب ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گوتم بدھ کا پیام امن آج 21 ویں صدی میں بھی وہی اہمیت رکھتا ہے جو آج سے ڈھائی صدی قبل رکھتا تھا ۔ اس تقریب میں سری لنکا کے صدر ایم سری سینا ‘ وزیر اعظم رانیل وکرما سنگھے ‘ سفارتکار ‘ سیاستدان اور دنیا بھر سے آئے کئی بدھسٹ لیڈرس شامل تھے ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے مذہب کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ اس نے دنیا کو گوتم بدھا اور ان کی تعلیمات کا لاقیمت تحفہ دیا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ بدھ ازم اور اس کی شاخیں ہماری حکمرانی ‘ کلچر اور فلسفہ سے جڑی ہوئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی ‘ وسطی ‘ جنوب مشرقی اور مشرق ایشیائی ممالک کو اس بات پر فخر ہے کہ ان کے رابطے گوتم بدھ کی سرزمین سے ہیں۔ وزیر اعظم مودی نے سری لنکا کی تعمیر و ترقی میں ہندوستان کی مدد کا تیقن دیا ۔ مودی نے کہا کہ وہ مانتے ہیں کہ ہندوستان اور سری لنکا کیلئے فی الحال اپنے تعلقات میں ایک بہترین موقع دستیاب ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سری لنکا کیلئے ہندوستان ہمیشہ ایک ایسا دوست اور شراکت دار رہے گا جو اس کی ترقی اور تعمیر میں مدد فراہم کرے گا ۔ انہوں نے دونوں ملکوں پر زور دیا کہ وہ گوتم بدھا کے نظریات کو آگے بڑھائیں اور اپنی پالیسیوں میں اور طرز عمل میں امن ‘ اجتماعیت ‘ ہمدردی کو مقدم رکھیں۔ مودی کا یہ دو سال میں دوسرا دورہ سری لنکا ہے ۔ قبل ازیں تقریب میں وزیر اعظم سری لنکا رانیل وکرما سنگھے نے کا ان کا روایتی انداز میں خیر مقدم کیا ۔وزیر اعظم نے وہاں اقوام متحدہ ویساک ڈے تقاریب کے افتتاح کے موقع پر روایتی شمع روشن کی ۔ کئی بدھسٹ راہبوں نے دعائیہ کلمات گنگنائے ۔ اس دوران نریندر مودی اپنی آنکھیں موندے اور ہاتھ جوڑے کھڑے رہے ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے رانیل وکرما سنگھے نے اس تقریب میں بحیثیت مہمان خصوصی شرکت پر مودی سے اظہار تشکر کیا ۔ انہوں نے کہا کہ آج کی دنیا میں بھی بدھ مت کی تعلیمات اہمیت رکھتی ہیں۔ بدھ ازم ایک اعتدال پسند راستہ دکھاتا ہے اور سماجی انصاف کو مستحکم کرنے پر زور دیتا ہے ۔ وزیر اعظم نریندر مودی دو روزہ دورہ پر کل سری لنکا پہونچے تھے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT