Saturday , July 22 2017
Home / شہر کی خبریں / نمس میںعصری آلات کی خریداری میں بے قاعدگیوں کی تردید : وزیر صحت

نمس میںعصری آلات کی خریداری میں بے قاعدگیوں کی تردید : وزیر صحت

حیدرآباد۔19ڈسمبر(سیاست نیوز) نمس میں بے قاعدگیوں اور بد عنوانیوں کے الزامات کو ریاستی وزیر صحت مسٹر لکشما ریڈی نے بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا کہ عصری آلات کی خریداری اور تزئین نو کے معاملات میں کوئی بے قاعدگیاں نہیں پائی گئی ہیں۔ انہوں نے اسمبلی میں ارکان اسمبلی سمپت کمار‘ ٹی رام موہن ریڈی‘ سی ایچ ومشی چند ریڈی‘ ٹی جیون ریڈی اور ڈاکٹر جی چنا ریڈی کی جانب سے اٹھائے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ نمس ہاسپٹل میں عصری آلات کی خریدی میں کوئی بدعنوانیاں نہیں ہوئی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ان الزامات کی محکمہ انسداد رشوت ستانی کے ذریعہ تحقیقات کروائی گئی ہیں اور تمام رپورٹس موصول ہو چکی ہیں اور حکومت ان تحقیقاتی رپورٹس کا جائزہ لے رہی ہے۔ مسٹر لکشما ریڈی نے وقفہ سوالات کے دوران بتایا کہ ریاستی حکومت صحت عامہ کو بہتر بنانے کے لئے سرکاری دواخانو ںکو بہتر بنانے کے اقدامات میں مصروف ہے اور اس بات کی کوشش کی جا رہی ہے کہ سرکاری دواخانوں کو عصری آلات سے لیس کیا جائے تاکہ سرکاری دواخانوں میں عوام کو بہتر سے بہتر سہولت فراہم کی جا سکے۔ کانگریسی ارکان اسمبلی نے نمس میں عصری آلات کی خریدی میں ہوئی بے قاعدگیوں میں ملوث افراد کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ان لوگو ںکی پشت پناہی کر رہی ہے جو بد عنوانیوں میں ملوث ہیں۔ کانگریس ارکان اسمبلی کی جانب سے عائد کردہ الزامات کو مسترد کرتے ہوئے ریاستی وزیر صحت نے کہا کہ موجودہ حکومت نے بے قاعد گیوں و بد عنوانیوں کی اطلاع کے ساتھ ہی جامع تحقیقات کا آغاز کیا اور اس سلسلہ میں مکمل غیر جانبدارانہ تحقیقات کروائی گئیں جب کہ سابق حکومتوں کی جانب سے تحقیقات سے بھی اجتناب کیا جاتا رہا ہے۔انہوں نے مزید بتایا کہ نمس ہاسپٹل کو عصری بنانے اور عصری آلات سے لیس کرنے کے علاوہ آپریشن تھیٹر وغیرہ کی تعمیر پر گذشتہ دو برسوں کے دوران 47کرور روپئے خرچ کئے گئے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT