Saturday , September 23 2017
Home / Top Stories / نندیال ضمنی انتخابات میں 80 فیصد رائے دہی

نندیال ضمنی انتخابات میں 80 فیصد رائے دہی

پیر کو ووٹوں کی گنتی ، حکمراں تلگودیشم اور اپوزیشن وائی ایس آر کانگریس کے مابین مقابلہ

حیدرآباد۔/23اگسٹ، ( سیاست نیوز) ریاست آندھرا پردیش کے حلقہ اسمبلی نندیال ( ضلع کرنول ) میں ضمنی انتخاب کیلئے آج منعقدہ رائے دہی ماسوا چند ایک معمولی نوعیت کے پیش آئے واقعات کے بحیثیت مجموعی پُرامن رہی۔الیکشن کمیشن ذرائع کے بموجب مجموعی طور پر80 فیصد رائے دہی ریکارڈ کی گئی۔ یہاں حکمراں تلگودیشم اور اپوزیشن وائی ایس آر کانگریس پارٹی میں سخت مقابلہ ہے۔آج شام سکریٹریٹ میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے چیف الکٹورل آفیسر مسٹر بھنور لعل نے کہا کہ کئی مراکز پر رائے دہی 6 بجے شام کے بعد بھی جاری رہی کیونکہ رائے دہندے رائے دہی کا وقت ختم ہونے سے قبل قطاروں میں ٹھہرے ہوئے تھے جس کی وجہ سے ان تمام رائے دہندوں کو حق رائے دہی سے استفادہ کا موقع فراہم کیا گیا۔

انہوں نے بتایا کہ رائے دہی کے اختتام تک جملہ رائے دہی کا اوسط 80فیصد تک پہنچ گیا۔ انہوں نے کہا کہ رائے دہی کے آغاز پر8 الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں میں فنی خرابی کے باعث فوری طور پر تبدیل کردیا گیا اور اسی طرح 23 کنٹرول یونٹس میں محسوس کی گئی فنی خرابی کی وجہ سے انہیں بھی فوری طور پر تبدیل کردیا گیا اور ان ووٹنگ مشینوں کی خرابی کے باعث رائے دہی پر اس کا کوئی اثر مرتب نہیں ہوا اور کسی قسم کی تاخیر نہیں ہوئی۔ ریاستی چیف الیکٹورل آفیسر نے بتایا کہ صرف ایک حلقہ اسمبلی نندیال میں رائے دہی کے پُرامن انعقاد کو یقینی بنانے کیلئے 72 فلائینگ اسکواڈز کو تعینات کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ حلقہ اسمبلی نندیال میں رائے دہی کے موقع پر گڑبڑ و ہنگامہ آرائی سے متعلق جو خدشات پائے جارہے تھے پُرامن رائے دہی کے باعث تمام اندیشے ختم ہوگئے۔ چیف الکٹورل آفیسر نے بتایا کہ رائے دہی کی ڈیوٹی پر تعینات ایک آرمڈ ریزرو پولیس کانسٹبل کے قلب پر حملہ کی وجہ سے موت واقع ہوگئی۔ اس کے علاوہ ایک اور پریسائیڈنگ آفیسر کے بھی قلب پر بھی حملہ ہوا جنہیں فوری طور پر دواخانہ منتقل کردیا گیا

اور وہ زیر علاج ہیں۔ مسٹر بھنور لعل نے بتایا کہ ڈیوٹی کے دوران موت واقع ہونے والے پولیس کانسٹبل کو ایکس گریشیا فراہم کیا جائے گا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ حلقہ اسمبلی نندیال کے ووٹوں کی گنتی پالی ٹیکنک کالج میں 28 اگسٹ کو صبح 8 بجے سے شروع ہوگی۔ پہلی مرتبہ ضمنی انتخابات میں ووٹر تنقیحی پیپر آڈٹ ٹرائیل کا استعمال کیا گیا ہے۔ یہ ایک مشین ہے جو کسی شخص کے رائے دہی سے استفادہ کے بعد ایک پرچی جاری کرتا ہے جس میں اُس پارٹی کی انتخابی علامت ہوتی ہے جس کے حق میں ووٹ کا استعمال کیا گیا۔ اس پرچی کو باکس میں رکھا جاتا ہے اور رائے دہندہ اپنے گھر نہیں لے جاسکتا۔واضح رہے کہ نندیال کے رکن اسمبلی بھوما ناگی ریڈی کے مارچ میں انتقال کی وجہ سے یہاں ضمنی انتخابات ناگزیر ہوگئے تھے۔ بھوما ناگی ریڈی نے 2014 میں وائی ایس آر کانگریس امیدوار کی حیثیت سے کامیابی حاصل کی تھی لیکن 2016 میں وہ تلگودیشم پارٹی میں شامل ہوگئے تھے۔ بھوما ناگی ریڈی کے بھتیجہ برہمانند ریڈی اس وقت تلگودیشم امیدوار ہیں جبکہ وائی ایس آر کانگریس پارٹی نے ایس چندر موہن ریڈی کو امیدوار نامزد کیا ہے جو ضمنی انتخابات سے عین قبل اپنی وابستگی تبدیل کرتے ہوئے پارٹی میں شامل ہوئے ہیں۔ اگرچہ انتخابی مقابلہ میں 15 امیدوار شریک ہیں لیکن اصل مقابلہ تلگودیشم اور وائی ایس آر کانگریس کے درمیان ہے۔

TOPPOPULARRECENT