Friday , August 18 2017
Home / Top Stories / نوجوانوں نے شدت پسندی کی خوب مزاحمت کی

نوجوانوں نے شدت پسندی کی خوب مزاحمت کی

دہشت گردوں کے عزائم کامیاب نہیں ہوں گے،مسلم علماء و دانشوروں سے ملاقات میں وزیراعظم مودی کا اظہار خیال

نئی دہلی 19 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) مسلم علماء و دانشوروں کے ایک وفد نے آج وزیراعظم نریندر مودی سے ملاقات کی جنھوں نے ہندوستانی نوجوانوں کی شدت پسندی کے خلاف مزاحمت پر ستائش کی۔ مودی نے کہاکہ ملک کا تہذیبی، روایتی اور سماجی ڈھانچہ کبھی بھی دہشت گردوں یا اُن کے سرپرستوں کے ناپاک منصوبوں کو کامیاب ہونے نہیں دے گا۔ نریندر مودی نے وفد سے کہاکہ اِس ورثہ کو برقرار رکھنا ہم سب کی اجتماعی ذمہ داری ہے۔ وزیراعظم کے دفتر سے جاری کردہ بیان میں یہ بات بتائی گئی۔ وفد نے مرکزی حکومت کی جانب سے مجموعی ترقی، تمام طبقات بشمول اقلیتوں کو سماجی و معاشی اور تعلیمی بااختیار بنانے کے لئے اقدامات پر  وزیراعظم کو مبارکباد دی۔ وزیراعظم نے کہاکہ ہندوستان میں نوجوانوں نے کامیابی کے ساتھ شدت پسندی کی مزاحمت کی حالانکہ آج دنیا کے بیشتر حصے اِس سے متاثر ہیں۔ اِس کا سہرا یقینا ہمارے دیرینہ ورثے کو جاتا ہے اور اب ہماری بھی یہ اجتماعی ذمہ داری ہے کہ ہم اِس عظیم ورثے کو برقرار رکھیں۔ اِس وفد میں امام عمر احمد الیاسی کل ہند تنظیم برائے ائمہ مساجد کے سربراہ، علیگڑھ مسلم یونیورسٹی کے وائس چانسلر لیفٹننٹ جنرل (ریٹائرڈ) ضمیرالدین شاہ اور جامعہ ملیہ کے وائس چانسلر طلعت احمد شریک تھے۔ نریندر مودی نے کہاکہ ہندوستان کا سماجی ڈھانچہ، یہاں کی تہذیب اور روایات کبھی بھی دہشت گردوں یا اُن کے اسپانسرس کو اپنے ناپاک منصوبوں میں کامیاب ہونے نہیں دے گی۔ اُنھوں نے تعلیم اور پیشہ وارانہ صلاحیت کی اہمیت پر بھی زور دیا اور کہاکہ روزگار، غربت سے اونچا اُٹھنے کے لئے یہ ضروری ہے۔ اِس وفد میں ایم وائی اقبال سابق جج سپریم کورٹ اور شاہد صدیقی اُردو صحیفہ نگار بھی شامل تھے۔ بات چیت کے دوران وزیراعظم نے ہندوستان کے لئے عازمین حج کی تعداد میں اضافہ کے فیصلے پر حکومت سعودی عرب کی ستائش کی اور کہاکہ بیرون ممالک ہندوستانی مسلمانوں کی مثبت شبیہہ پائی جاتی ہے۔ مسلم وفد نے بھی سعودی حکومت کے فیصلہ کی ستائش کے ساتھ ساتھ اِس مسئلہ پر کامیاب نمائندگی کے لئے وزیراعظم نریندر مودی کا شکریہ ادا کیا۔ وفد نے دنیا بھر میں مختلف ممالک کے ساتھ باہمی تعلقات کو مستحکم بنانے کے لئے اُن کی کوششوں پر مبارکباد دی اور کہاکہ آج دنیا کے کونے کونے میں ہر ہندوستانی شہری میں فخر کا احساس پایا جاتا ہے۔ وفد نے متحدہ طور پر وزیراعظم کی کرپشن اور کالا دھن کے خلاف مہم کی والہانہ تائید کی۔ وفد نے اِس بات سے بھی اتفاق کیاکہ کرپشن کے خلاف لڑائی سے غریب عوام کو فائدہ ہوگا جن میں مسلمان بھی شامل ہیں۔ وفد کے ارکان نے سوچھ بھارت کے لئے وزیراعظم کی کوششوں کی ستائش کی۔ منسٹر آف اسٹیٹ اقلیتی اُمور (آزادانہ چارج) و پارلیمانی اُمور مختار عباس نقوی کے علاوہ مملکتی وزیر خارجہ ایم جے اکبر اور دیگر اِس موقع پر موجود تھے۔ بعدازاں مودی نے ٹوئٹ کیاکہ علماء ، مسلم دانشوروں اور ماہرین تعلیم کے ساتھ اُنھوں نے وسیع تر تبادلہ خیال کیا۔

TOPPOPULARRECENT