Sunday , April 30 2017
Home / Top Stories / نوجوانوں کو ٹھوس ثبوت کے بغیر گرفتار نہ کیا جائے

نوجوانوں کو ٹھوس ثبوت کے بغیر گرفتار نہ کیا جائے

باغیانہ سرگرمیوں کے صرف الزام پر ہراسانی سے گریز پر زور۔ وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ

حیدرآباد 27 نومبر ( پی ٹی آئی ) وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے آج ملک کے اعلی پولیس عہدیداروں سے کہا کہ وہ کسی بھی فرد یا نوجوان کو ریاڈیکلائزیشن کے صرف الزام پر گرفتار یا ہراساں نہ کریں جب تک ان کے پاس ٹھوس ثبوت دستیاب نہ ہو۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ جو رضاکارانہ تنظیمیں جو غلط کاریوں میں ملوث نہیں ہیں ‘ ترقیاتی کام جاری رکھ سکتی ہیں تاہم انہوں نے ایسی تنظیموں کو خبردار کیا ہے جو قوم مخالف سرگرمیوں میں ملوث ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ایسی تنظیموں کو بخشا نہیں جائیگا ۔ وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ یہاں سردار ولبھ بھائی پٹیل نیشنل پولیس اکیڈیمی میں ڈائرکٹرس جنرل پولیس اور انسپکٹرس جنرل پولیس کی سالانہ کانفرنس کے اختتامی اجلاس سے خطاب کر رہے تھے ۔ وزیر داخلہ نے اعلی پولیس عہدیداروں سے بہت واضح طور پر کہہ دیا کہ کسی بھی بے گناہ کو صرف ریاڈیکلائزیشن کے الزام پر ہراساں یا گرفتار نہیں کیا جانا چاہئے ۔ کسی بھی فرد یا شخص کو اسی وقت گرفتار کیا جانا چاہئے جب ملزم کے خلاف واضح اور ٹھوس ثبوت حاصل کرلیا جائے ۔ سرکاری ذرائع نے یہ بات بتائی ۔ وزیر داخلہ نے تاہم ڈائرکٹرس جنرل پولیس اور انسپکٹرس جنرل پولیس کو ہدایت دی کہ وہ نوجوانوں کو آن لائین باغیانہ خیالات کا شکار بنائے جانے کی کوششوں کے خلاف چوکس رہیں اور وہ ریاستوں میں سائبر سکیوریٹی کو مستحکم بنائیں۔ جمعہ کو اس سہ روزہ  کانفرنس کے افتتاحی اجلاس میں وزیر داخلہ نے پولیس حکام سے کہا تھا کہ ریاستی اور مرکزی فورسیس کے مابین قریبی تعاون کی وجہ سے ایسے نوجوان ملک میں دہشت گردانہ حملے کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکے جو آن لائین باغیانہ خیالات کا شکار ہوئے تھے یا پھر وہ آئی ایس آئی ایس گروپ سے متاثر ہوئے تھے ۔ انہوں نے کہا تھا کہ اب تک آئی ایس آئی ایس سے متاثر ہونے والے 67 نوجوانوں کو ملک میں گرفتار کیا گیا ہے ۔ آج کے اجلاس میںبھی وزیر داخلہ نے رضاکارانہ تنظیموں کے خلاف کارروائی کا مسئلہ اٹھایا اور کہا کہ کسی بھی غلط کاری سے پاک تنظیم کو حکومت کی جانب سے کسی طرح کی کارروائی کا نشانہ نہیں بنایا جائیگا تاہم جو تنظیمیں مبینہ طور پر ترقیاتی کاموں کے نام پر قوم مخالف سرگرمیوں میں ملوث ہیں انہیں بخشا نہیں جائیگا ۔ حکومت نے حال ہی میں متنازعہ اسکالر ذاکر نائک کی جانب سے چلائی جانے والی تنظیم پر امتناع عائد کردیا تھا اور اس پر دہشت گردوں سے روابط کے الزامات عائد کئے گئے تھے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT