Monday , July 24 2017
Home / شہر کی خبریں / نوٹوں کی تبدیلی کا فیصلہ صبر آزما

نوٹوں کی تبدیلی کا فیصلہ صبر آزما

سیاسی مفادات کیلئے عوام کو اُکسانا مناسب نہیں : دتاتریہ
حیدرآباد۔ 11 ڈسمبر (سیاست نیوز) مرکزی وزیر محنت و روزگار بنڈارو دتاتریہ نے بڑی کرنسی نوٹوں کی منسوخی کے مسئلہ پر کہا کہ ملک کو آزادی حاصل ہونے کے بعد وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے بڑی کرنسی نوٹوں کی منسوخی کا لیا گیا فیصلہ انتہائی صبر آزما فیصلہ قرار دیا جائے گا لیکن اس فیصلہ کو لے کر بعض سیاسی جماعتیں اپنے سیاسی مفادات کے حصول کیلئے وزیراعظم کے فیصلے کو سیاسی رنگ دیتے ہوئے احتجاج کیلئے عوام کو اُکسانا مناسب بات نہیں ہوگی۔ وزیر محنت و روزگار اور کانگریس، ترنمول کانگریس اور دیگر اپوزیشن جماعتوں کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ نوٹوں کی منسوخی سے متعلق وزیراعظم کے فیصلہ پر کی جانے والی تنقیدیں نہ صرف مضحکہ خیز ہیں بلکہ بے معنی ہیں۔ انہوں نے نوٹوں کی منسوخی کے مسئلہ پر پارلیمنٹ میں جاری صورتحال اور پارلیمنٹ کی کارروائی کو چلنے نہ دینے بعض جماعتوں کی کوششیں انتہائی بدبختانہ ہیں کیونکہ نوٹوں کو منسوخ کرنے کے وزیراعظم کی جانب سے کئے گئے فیصلہ کا ملک بھر میں ہر طرف زبردست خیرمقدم کیا جارہا ہے بلکہ ملک کے عوام صبر و سکون کا مظاہرہ کرتے ہوئے مرکزی حکومت کے ساتھ بھرپور تعاون کررہے ہیں۔ بنڈارو دتاتریہ نے مزید کہا کہ 16 ڈسمبر سے ڈیجیٹل لٹریسی کے مسئلہ پر بی جے پی قائدین و کارکن اور حامی گاؤں گاؤں گھوم پھر کر بڑے پیمانے پر اس کی اہمیت سے واقف کرواتے ہوئے تشہیری مہم چلائیں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ نوٹوں کو منسوخ کرنے کا فیصلہ ہرگز اچانک کیا گیا فیصلہ نہیں ہے بلکہ ایک طویل عرصہ سے اس کے اشارے دیئے جاتے رہے ہیں۔ مرکزی وزیر محنت و روزگار نے مزید کہا کہ لیبر قوانین کو ریاستی حکومتیں موثر انداز میں عمل آوری کو یقینی بنائیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT