Sunday , July 23 2017
Home / Top Stories / نوٹوں کی تبدیلی کیلئے راہول بھی قطار میں کھڑے ہوگئے

نوٹوں کی تبدیلی کیلئے راہول بھی قطار میں کھڑے ہوگئے

وزیراعظم کے فیصلہ پر تنقید ، عوام کو سخت دشواریوں کی شکایت

نئی دہلی ۔ /11 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے آج اسٹیٹ بینک آف انڈیا (ایس بی آئی) پارلیمنٹ ہاوز برانچ پہونچکر کئی افراد کو حیرت میں ڈال دیا جہاں انہوں نے پرانے نوٹوں کے عوض نئے نوٹ کا تبادلہ کیا ۔ اس موقع پر انہوں نے نریندر منودی کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ مرکز کے اس اقدام سے عوام کو ہونے والی مصیبتوں کو وزیراعظم نہیں سمجھیں گے ۔ وزیراعظم پر تنقید کرتے ہوئے حکومت محض 15 یا 20 افراد کیلئے نہیں بلکہ تمام غریبوں کیلئے ہونا چاہئیے ۔ کانگریس کے نائب صدر نے کہا کہ حکومت کی جانب سے 500 اور 1000 روپئے کے کرنسی نوٹوں کو کالعدم کئے جانے کے بعد عوام کو سخت مصیبتوں کا سامنا ہے اور ایک ایسے وقت غریب عوام ان دشواریوں کا سامنا کررہے ہیں وہ بھی ان کے ساتھ ہیں اور اپنے قدیم 4000 روپیوں کی تبدیلی کے لئے دیگر پریشان حال عوام کے ساتھ اس قطار میں کھڑے ہیں ۔ راہول گاندھی نے کہا کہ اس قطار میں کوئی کروڑ پتی نہیں ہے ۔ غریب عوام کئی گھنٹوں سے اس قطار میں کھڑے ہیں ۔ میں چاہتا ہوں کہ حکومت محض 15 یا 20 افراد کیلئے نہیں بلکہ تمام غریبوں کے لئے ہونی چاہئیے ‘‘ ۔ راہول گاندھی نے مزید کہا کہ ’’عوام مصیبتوں کاسامنا کررہے ہیں اس لئے میں ان کے ساتھ یہاں کھڑا ہوں ۔ میں اپنے قدیم 4000 ہزار روپئے کے عوض نئے کرنسی نوٹ حاصل کرنے آیا ہوں ‘‘۔ راہول گاندھی نے وہاں موجود رپورٹروں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ’’عوام کو درپیش دشواریوں کو آپ (رپورٹرس) یا آپ کے کروڑ پتی مالکین یا پھر وزیراعظم نہیں سمجھ سکیں گے ‘‘ ۔ نہرو ۔ گاندھی خاندان کے سیاسی وارث شام 4 بجکر 25 منٹ پر ایس بی آئی پہونچے اور عام آدمی کی طرح قطار میں ٹھہر کر اپنی قدیم نوٹوں کا تبادلہ کروایا ۔ اس موقع پر کئی افراد کو میں اپنے درمیان دیکھ کر حیرت زدہ رہ گیا ۔ راہول کے ساتھ کئی افراد نے سیلفی لیا ۔ بینک ملازمین کو بھی راہول کی تصاویر اپنے موبائیل فون کیمروں میں قید کرتے ہوئے دیکھا گیا ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT