Friday , September 22 2017
Home / ہندوستان / نوٹوں کی تنسیخ کے نقصانات فوائد سے زیادہ

نوٹوں کی تنسیخ کے نقصانات فوائد سے زیادہ

سابق گورنر ریزرو بینک آف انڈیا رگھو رام راجن کا بیان ، حکومت کو انتباہی نوٹ روانہ کرنے کا ادعا

نئی دہلی ۔ 5 ستمبر ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) سابق گورنر ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی ) رگھورام راجن نے حکومت کو انتباہ دیا تھا کہ نوٹوں کی تنسیخ کے فوائد اُن کے نقصانات سے کم ہوں گے اور تجویز پیش کی تھی کہ کوئی بہتر متبادل طریقہ نوٹوں کی تنسیخ کے اہداف کو حاصل کرنے کیلئے استعمال کیا جائے ۔ انھوں نے ’’اصلاحات کی لفاظی پر میں نے وہی کیا جو کرنا چاہئے تھا ‘‘نامی کتاب میں تحریر کیا ہے کہ اُنھوں نے انتباہ دیا تھا کہ اس اقدام کے نتیجہ میں نقصانات ہوں گے اور یہ نقصانات اس اقدام سے حاصل ہونے والے فوائد سے زیادہ ہوں گے ۔ رگھورام راجن 2013ء اور 2016 ء کے درمیان گورنر آر بی آئی رہ چکے ہیں ۔ انھوں نے کہاکہ فبروری 2016 ء میں حکومت نے نوٹوں کی تنسیخ کے بارے میں اُن کے نظریات دریافت کئے تھے ، چنانچہ انھوں نے زبانی اپنے نظریات بیان کردیئے ، حالانکہ اس اقدام سے طویل مدتی فوائد ممکن تھے لیکن اُن کا احساس تھا کہ مختصرمدتی بنیاد پر معاشی نقصانات اس اقدام سے حاصل ہونے والے فوائد سے زیادہ ہوں گے ۔ انھوں نے اپنے نظریات کھلے الفاظ میں ظاہر کردیئے تھے ۔ انھوں نے تحریر کیا ہے کہ اُن سے پوچھا گیا تھا کہ کیا اُنھوں نے کوئی نوٹ حکومت کے حوالے کیا تھا جس میں امکانات اور فوائد کا خاکہ کھینچا گیا تھا جو نوٹوں کی تنسیخ کی وجہ سے حاصل ہونے والے تھے ۔ علاوہ ازیں کیا اُنھوں نے اسی قسم کے اہداف حاصل کرنے کیلئے متبادل طریقوں کی تجویز رکھی تھی ۔ انھوں نے کہاکہ حسن وقباح کا جائزہ لینے والی حکومت نے کہا تھا کہ اس کے باوجود وہ نوٹوں کی تنسیخ کے فیصلے پر عمل آوری کرے گی ۔ نوٹ میں اُن تمام تیاریوں کا خاکہ پیش کیا گیا تھا جن کی ایسے فیصلے پر عمل آوری کی تیاریوں کے دوران ضرورت ہوگی ۔ آر بی آئی نے انتباہ دیدیا تھا کہ اس کا کیا نتیجہ نکل سکتا ہے، اگر تیاریاں ناکافی ہوں ، لیکن حکومت نے ایک کمیٹی قائم کردی ۔ سابق گورنر آر بی آئی رگھو رام راجن نے کہاکہ ڈپٹی گورنر انچارج برائے کرنسی نے ان اجلاسوں میں شرکت کی تھی اور آر بی آئی سے نوٹوں کی تنسیخ کے فیصلے کے بارے میں کچھ پوچھنا نامناسب تھا ۔ یہ انکشافات ریزرو بینک آف انڈیا کے اس دعویٰ کے پیش نظر اہمیت رکھتے ہیں کہ منسوخ شدہ نوٹوں کی 99 فیصد تعداد بینکنگ نظام میں واپس آچکی ہے ۔

چیف منسٹر ٹاملناڈو کے پلنی سوامی کے اجلاس میں
اناڈی ایم کے کے 111ارکان اسمبلی شریک
چینائی ۔ 5 ستمبر ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) چیف منسٹر ٹاملناڈو کے پلنی سوامی کے اسمبلی اجلاس میں انا ڈی ایم کے کے 111 ارکان اسمبلی نے شرکت کی ، جبکہ ریاستی وزیر سمکیات اور سینئر انا ڈی ایم کے قائد جئے کمار نے کہا کہ ان سب کو چیف منسٹر پر اعتماد ہے ۔

TOPPOPULARRECENT