Wednesday , October 18 2017
Home / شہر کی خبریں / نوٹوں کی منسوخی سے عام زندگی پر منفی اثر

نوٹوں کی منسوخی سے عام زندگی پر منفی اثر

تلنگانہ و اے پی میں تجارت پر اثرات
حیدرآباد 20نومبر (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی حکومت کی جانب سے بڑی نوٹوں کی منسوخی پر عام زندگی دونوں تلگو ریاستوں تلنگانہ اور آندھراپردیش میں بری طرح متاثر رہی اور اس کا اثر چھوٹے کاروبار پر کافی زیادہ پڑا ہے ۔ بازاروں میں ریزگاری یعنی چلر کی کافی کمی محسوس کی جارہی ہے ۔اس کمی سے مٹن کی قیمتوں میں اضافہ ہوگیا ہے تو دوسری طرف ہول سیل مارکٹس میں مٹن کی سپلائی میں کمی ہوئی ہے ۔ شہر حیدرآباد کی مشہور رام نگر مچھلی مارکٹ میں بھی ایسی ہی صورتحال دیکھنے میں آئی ہے جہاں پر کاروبار پر بری طرح اثر پڑا ہے ۔ اتوار کو اس بازار میں کاروبار بہتر ہوتا ہے تاہم ریزگاری کی کمی کے سبب روزگار پر اثر پڑا ہے تاجرین نے بڑی نوٹوں کی منسوخی کے اقدام کو جلد بازی میں لیا گیا فیصلہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس فیصلہ سے پیدا ہونے والی صورتحال سے نمٹنے کیلئے حکومت کی طرف سے کوئی اقدامات نہیں کئے گئے جس سے ان کا کاروبار بری طرح متاثر ہوگیا ہے ۔انہوں نے کہاکہ گاہک پرانے پانچ سو روپئے یا پھر نئے دو ہزار روپئے کی نوٹ لے کر خریداری کیلئے آرہے ہیں جس کا چلر ان کے پاس نہیں ہے ۔ انہوں نے اس اقدام پر مرکزی حکومت پر شدید برہمی کا اظہار کیا ۔

TOPPOPULARRECENT