Wednesday , August 16 2017
Home / Top Stories / نوٹ بندی نے دہشت گردانہ سرگرمیوں اور اسمگلنگ کو تباہ کردیا

نوٹ بندی نے دہشت گردانہ سرگرمیوں اور اسمگلنگ کو تباہ کردیا

چوروں کے سردار کو حکومت کا اقدام پسند نہیں آیا ، امیروں کو نہیں بلکہ غریبوں کو بااختیار بنانے کی مہم جاری ، وزیراعظم مودی کا ادعا

دہرہ دون ۔27 ڈسمبر۔(سیاست ڈاٹ کام) بڑے کارپوریٹ اداروں اور امیر شخصیتوں کی مدد کرنے سے متعلق راہول گاندھی کے الزام پر جوابی تنقید میں وزیراعظم نریندر مودی نے آج کہاکہ اُن کی حکومت نے غریبوں کے لئے کام کرنے پر توجہہ مرکوز کررکھی ہے اور ادعا کیا کہ نوٹ بندی کے اقدام میں بیک وقت کالا دھن پر کاری ضرب لگائی ، دہشت گردی کے لئے فنڈس کی فراہمی کو روک دیا اور ساتھ ہی ساتھ انسانی اور منشیات کی اسمگلنگ کے رجحان کو بھی نقصان پہنچایا ہے ۔ نوٹ بندی کی مخالفت کرنے والی پارٹیوں کو نشانہ بناتے ہوئے وزیراعظم نے دعویٰ کیا کہ بعض لوگ اُن کے فیصلے پر افسردہ ہیں کیوں کہ حکومت کے اقدام نے چوروں کے چور کو نقصان پہنچایا ہے ۔ اسمبلی انتخابات والی ریاست اُترکھنڈ میں بی جے پی کی پریورتن مہا ریالی سے خطاب کرتے ہوئے مودی نے راہول کے الزام کو جھٹلانے کی کوشش کی جب اُنھوں نے کہاکہ جہاں یو پی اے حکومت کا رعایتی گیاس سلینڈرس کی تعداد کو 9 سے 12 کرنے کا فیصلہ وقتی رہا ، وہیں اُن کی حکومت نے سطح غربت سے نیچے زندگی بسر کرنے والے پانچ کروڑ لوگوں کو گیاس سلینڈرس دیئے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ اٹھارویں صدی میں اٹھارہ ہزار دیہات برقی کے بغیر زندگی گذارتے تھے اور ہم نے ایک ہزار دنوں میں 12,000 دیہات کیلئے برقی فرہم کی ہے ۔ بقایا چھ ہزار کے سلسلے میں کام جاری ہے ۔ کیا یہ امیروں کیلئے کام کرنا ہوا ، یا غریبوں کو بااختیار بنایا جارہا ہے ؟ انھوں نے بتایا کہ 500 اور 1000 روپئے کے نوٹوں کا چلن بند کرنے کے فیصلے کے ذریعہ گھروں میں ذخیرہ کالا دھن اب بینکوں میں آرہا ہے اور وہاں سے عوام تک پہونچ رہا ہے ۔ انھوں نے کہاکہ وہ کالا دھن سے چھٹکارہ دلانے کیلئے جس نے ملک کو تباہ کیا ہے ، چوکیدار کی اپنی ڈیوٹی انجام دے رہے ہیں ۔ انھوں نے دعویٰ کیا کہ بعض لوگوں میں کرپشن رچ بس گیا ہے ۔ وہ کوئی نہ کوئی ذریعہ کو بروئے کار لاتے ہوئے کالا دھن کو سفید بنانے میں جٹے رہتے ہیں اور سوچتے ہیں کہ مودی کو خبر نہ ہوگی ۔ لیکن ہم جانتے ہیں کہ اب اُنھیں پکڑا جارہا ہے ، اس طرح وزیراعظم نے اُن مختلف دھاؤں کا حوالہ دیا جو قانون نافذ کرنے والے ادارے کالا دھن کا ذخیرہ رکھنے والوں کے خلاف انجام دے رہے ہیں۔

نوٹ بندی کو صفائی کی مہم قرار دیتے ہوئے وزیراعظم نے اُن کی تائید و حمایت کرنے والے لوگوں کا شکریہ ادا کیا۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ اس اقدام کا مقصد عوام کو بااختیار بنانا اور اُنھیں درخشاں مستقبل فراہم کرنا ہے ۔ ’’میں دیانتدار لوگوں کو بااختیار بنانے کیلئے جدوجہد کررہا ہوں ۔ 8 نومبر کے فیصلے نے کالا دھن اور دہشت گردی کے لئے فنڈس کی فراہمی کے کام کو کاری ضرب لگائی ہے ‘‘۔ وزیراعظم نے کہا کہ یہ فیصلہ بعض لوگوں کو پسند نہیں آرہا ہے ، کیونکہ اس سے چوروں کے سردار کو راست ضرب لگی ہے ۔ مسلح افواج والوں کی جانب سے ایک رُتبہ ایک وظیفہ کے مطالبہ کا حوالہ دیتے ہوئے مودی نے کہاکہ اُس پارٹی اور اُس خاندان نے جو زائد از 40 سال اس ملک پر حکمراں رہا ، 2014 ء کے لوک سبھا انتخابات تک اس مسئلہ پر کچھ نہیں کیاہے ۔ اُترکھنڈ اُن ریاستوں میں سے ہے جہاں سے مسلح افواج میں خدمات انجام دینے کیلئے ہزاروں نوجوان شامل ہوتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT