Tuesday , June 27 2017
Home / ہندوستان / نکسلائٹس زیراثر ریاستوں کے چیف منسٹرس کا اجلاس

نکسلائٹس زیراثر ریاستوں کے چیف منسٹرس کا اجلاس

نئی دہلی۔7مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) نکسلائٹس زیراثر ریاستوں کے چیف منسٹرس نئی دہلی میں کل اعلیٰ سطحی سیول اور پولیس عہدیداروں کے ساتھ ایک اجلاس منعقد کریں گے تاکہ مسلح باغیوں سے نمٹنے کے طریقوں کیلئے ایک نئی حکمت عملی کا تعین کیا جائے ۔ یہ اجلاس 25 نیم فوجی ارکان عملہ کی چھتیس گڑھ میں ماؤسٹوں کے ایک گروپ کے ہاتھوں ہلاکت کے دو ہفتے بعد منعقد کیا جارہا ہے ۔ اس کی صدارت امکان ہے کہ مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ کریں گے ۔ توقع ہے کہ اس سے انسداد نکسلائٹس حکمت عملی میں مدد ملے گی اور نیم فوجی افراد کے خلاف جنگ میں استحکام پیدا ہوگا ۔ چھتیس گڑھ اور دیگر ریاستوں میں آئندہ ہفتوں میں دھاوے کئے جانے کا امکان ہے ۔ وزارت داخلہ کے ایک عہدیدار نے کہا کہ چھتیس گڑھ ‘ جھارکھنڈ ‘ اڈیشہ ‘ مغربی بنگال ‘ بہار ‘ مہاراشٹرا ‘ تلنگانہ ‘ اترپردیش ‘ مدھیہ پردیش اور آندھراپردیش کے چیف منسٹرس کو اس اہم اجلاس میں شرکت کیلئے مدعو کیا گیا ہے ۔ ضلع مجسٹریٹس اور 35 ریاستوں کے جو نکسلائٹس سے بدترین متاثرہ اضلاع رکھتے ہیں پولیس سپرنٹنڈنٹس کو نیم فوجی تنظیموں اور صیانتی محکموں کے سربراہوں کے ساتھ اس اجلاس میں کیلئے مدعو کیا گیا ہے ۔ توقع ہے کہ اجلاس میں محکمہ سراغ رسانی کی کارروائیوں اور نظام کو مستحکم بنانے کے طریقوں پر غور کیا جائے گا ۔ باریک بینی سے تمام جاری کارروائیوں کا تجزیہ کیا جائے گا ۔ مسائل زدہ علاقوں کی شناخت کی جائے گی اور بہتر نتائج کیلئے حل تلاش کئے جائیں گے ۔ بات چیت سرفہرست موضوعات میں انسداد نکسلائٹس حکمت عملی کی تنظیم جدید ‘ اسے زیادہ موثر بنانے اور ہلاکتوں کی تعداد کم کرنے پر غور کیا جائے گا ۔ مرکزی وزیر داخلہ نے صیانتی عہدیداروں سے کہا ہے کہ نکسلائٹس کے سلسلہ وار حملوں کے مسئلہ کے حل پر معمول کے طریقہ کار سے ہٹ کر غور کیا جانا چاہیئے ۔ صیانتی عملہ کو گڑبڑزدہ علاقوں میں سڑکوں کی مرمت اور ترقیاتی کاموں پر توجہ دینی چاہیئے ۔ سڑکوں کی تعمیر اور دیگر ترقیاتی سرگرمیوں پر بھی تبادلہ خیال کیا جائے گا جن سے پراجکٹس کی تیز رفتاری سے تکمیل ہوسکتی ہے ۔ مرکزی وزارت داخلہ کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ فی الحال 90فیصد ماؤسٹ سرگرمیاں 35اضلاع تک محدود ہیں ۔ حالانکہ ان سے کہا گیا تھا کہ 10ریاستوں کے 68اضلاع میں صرف چند علاقے نکسلائٹس کے مستحکم گڑھ ہیں لیکن نکسلائٹس زیر اثر علاقے ان کی توقع سے زیادہ تعداد میں سامنے آئے ۔ نکسلائٹس جدید ترین ٹکنالوجی بھی استعمال کررہے ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT