Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / نہرو زوالوجیکل پارک میں عنقریب مفت وائی فائی خدمات

نہرو زوالوجیکل پارک میں عنقریب مفت وائی فائی خدمات

مختلف تنظیموں کی مخالفت، جانوروں کی زندگی کو شعاعوں سے خطرہ لاحق ہونے کا اندیشہ

حیدرآباد 4 اکٹوبر (سیاست نیوز) مفت وائی فائی خدمات کے ذریعہ اسمارٹ سٹی کے منصوبہ کو تیز رفتار بنانے کے لئے حکومت کی جانب سے نہرو زوالوجیکل پارک میں مفت وائی فائی کی فراہمی کے متعلق سنجیدہ غور کیا جانے لگا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ بہت جلد زو پارک کو بغرض سیاحت پہونچنے والے سیاحوں کو مفت وائی فائی خدمات حاصل ہوگی۔ شہر حیدرآباد کو اسمارٹ سٹی میں تبدیل کرنے کے لئے شروع کردہ منصوبہ کے تحت تاحال شہر کے مختلف مقامات بالخصوص تاریخی چارمینار، سالار جنگ میوزیم، حسین ساگر، نیکلس روڈ وغیرہ کو وائی فائی سے مربوط کردیا گیا ہے اور بہت جلد توقع ہے کہ نہرو زوالوجیکل پارک کو وائی فائی سے مربوط کیا جائے گا۔ لیکن حیدرآباد میں موجود زو پارک میں وائی فائی خدمات کے آغاز کی مختلف تنظیموں بالخصوص تحفظ جانوران کیلئے کام کرنے والی تنظیموں نے زو پارک کو وائی فائی سے مربوط کرنے کی مخالفت شروع کردی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ وائی فائی سے نکلنے والی شعاعوں کے متعلق خدشات کا اظہار کیا جارہا ہے۔ اِسی طرح یہ بھی باور کروایا جارہا ہے کہ اگر مفت وائی فائی خدمات کا آغاز ہوتا ہے تو ایسی صورت میں زو پارک پہونچنے والے سیاح جانوروں کو دیکھنے اور اُن کے متعلق معلومات حاصل کرنے سے زیادہ اپنے اسمارٹ فون میں مصروف رہیں گے۔ بتایا جارہا ہے کہ زو میں موجود جانوروں کے لئے جو ماحول فراہم کیا گیا ہے اُس میں اگر وائی فائی کی شعاعیں شامل ہوجاتی ہیں تو ایسی صورت میں جانوروں کی زندگی کو خطرہ لاحق ہوسکتا ہے۔ علاوہ ازیں وہ مختلف امراض کا شکار ہوسکتے ہیں۔ جانوروں کے درمیان وائی فائی کی شعائیں پہونچنے کی صورت میں جانوروں کے برتاؤ میں بھی تبدیلی آسکتی ہے۔ اسی لئے نہرو زوالوجیکل پارک کو وائی فائی سے مربوط کرنے کی مخالفت کی جارہی ہے۔ عہدیداروں کا کہنا ہے کہ تمام نکات کا جائزہ لینے کے علاوہ وائی فائی سے نکلنے والی شعاعوں کی تفصیل حاصل کرنے کے بعد اس سلسلہ میں کوئی قطعی فیصلہ کیا جائے گا۔ اِسی طرح اِس بات کو یقینی بنانے کی کوشش  کی جائے گی کہ جانوروں کے پنجروں کے علاوہ ایسے مقامات جہاں سے شعاعیں راست جانوروں پر پڑتی ہوں اُن مقامات پر وائی فائی کے انٹینا لگانے سے گریز کیا جائے گا۔ بعض تنظیموں کا کہنا ہے کہ اِس طرح کے اقدامات نہرو زوالوجیکل پارک میں آنے والوں کی تعداد میں اضافہ ہوسکتا ہے، سیاحوں کو جانوروں سے متعلق معلومات حاصل ہونے لگیں گی۔ علاوہ ازیں جو لوگ ماحولیات کے تحفظ کے لئے سنجیدہ ہیں وہ بھی اِس عمل کی مخالفت کررہے ہیں۔ ماہرین کے بموجب برطانیہ اور یوروپ کے بیشتر ممالک میں سیاحوں کو انٹرنیٹ کی سہولت فراہم کی گئی ہے لیکن ان مقامات پر اس سہولت کے کوئی منفی اثرات مرتب نہیں ہورہے ہیں۔ جبکہ محکمہ جنگلات کے عہدیدار اس بات کا اعتراف کررہے ہیں کہ جانوروں کے رویہ میں اِن شعاعوں کے سبب کچھ تبدیلی واقع ہوسکتی ہے، اِسی لئے پنجروں کے قریب وائی فائی روٹر لگانے سے گریز کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ حکومت نے شہر حیدرآباد و سکندرآباد کے مختلف سیاحتی مقامات کو وائی فائی سے مربوط کرتے ہوئے سیاحوں کی تعداد میں اضافہ کا جو فیصلہ کیا ہے اسی منصوبہ کے تحت نہرو زوالوجیکل پارک کو بھی وائی فائی سے مربوط کرنے کا منصوبہ ہے۔ نہرو زوالوجیکل پارک کو وائی فائی سے مربوط کئے جانے کی صورت میں سیاحوں  کی بڑی تعداد کی آمد کی توقع کی جارہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT