Friday , August 18 2017
Home / سیاسیات / نیا ٹکراؤ : دہلی کابینہ میں لیفٹننٹ گورنر کیخلاف قرارداد منظور

نیا ٹکراؤ : دہلی کابینہ میں لیفٹننٹ گورنر کیخلاف قرارداد منظور

نئی دہلی ، 23 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) دہلی کابینہ نے آج کشیدگی میں عدیم النظیر شدت پیدا کرتے ہوئے لیفٹننٹ گورنر (ایل جی) نجیب جنگ کے خلاف قراردادیں منظور کرتے ہوئے اُن سے وضاحت طلب کی کہ ویاٹ کمشنر کو عہدہ سے ہٹادینے کے پس پردہ ’ناگزیر حالات‘ کیا رہے، اور ایک وزراء گروپ مقرر کیا کہ بیوروکریٹس کو ’سیاسی نشانہ بنانے‘ اور مبینہ دھمکیوں سے محفوظ رکھا جاسکے۔ چیف منسٹر اروند کجریوال کی زیرصدارت کابینی اجلاس نے ویاٹ کمشنر وجئے کمار کے ’اچانک، بے محل اور وضاحت سے عاری‘ تبادلے پر گہری تشویش ظاہر کی، اور الزام عائد کیا کہ انھیں ایک انٹرنیشنل فوڈ گروپ اور آٹوموبائلس کے سیاسی طور پر طاقتور ڈیلر کے خلاف کارروائی کے علاوہ لگ بھگ 200 دھوکہ باز کمپنیوں پر دھاوؤں کی پاداش میں عہدہ سے ہٹا دیا گیا۔ اس دوران ایل جی کے سکریٹریٹ نے ان الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ نجیب جنگ نے وزارت امور داخلہ سے موصولہ احکام کی بنیاد پر اقدام کیا۔ اس نے کہا کہ وزارت داخلہ نے 9 اکٹوبر کو ہدایات جاری کئے تھے کہ پانچ افسران جن کا قبل ازیں دہلی سے دیگر مرکزی زیرانتظام علاقوں کو تبادلہ کیا گیا تھا، انھیں فوری اثر کے ساتھ عہدہ سے رخصت کردیا جائے۔ ان افسروں میں وجئے کمار کا نام شامل تھا۔

TOPPOPULARRECENT