Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / نیرالہ میں پولیس کی جانب سے دلتوں کو مارپیٹ کے واقعہ کے سلسلہ میں حیدرآباد ہائی کورٹ میں رپورٹ

نیرالہ میں پولیس کی جانب سے دلتوں کو مارپیٹ کے واقعہ کے سلسلہ میں حیدرآباد ہائی کورٹ میں رپورٹ

حیدرآباد 16 اگست ( یو این آئی) تلنگانہ کے ضلع سرسلہ کے نیرالہ میں پولیس کی جانب سے دلتوں کو مارپیٹ کے واقعہ کے سلسلہ میں ریاستی محکمہ داخلہ کی جانب سے حیدرآباد ہائی کورٹ میں رپورٹ داخل کی گئی ہے ۔ راجناسرسلہ ضلع میں 2جولائی کو ریت کی لاری کی ٹکر پر ایک دیہاتی کی ہلاکت کے واقعہ کے بعد ریت سے لدی دو لاریوں کو مبینہ طورپردیہاتیوں کی جانب سے نذر آتش کر دیا گیاتھا جس کے بعد پولیس نے ان دلتو ں کو حراست میں لے کر مبینہ طور پرمارپیٹ کی تھی۔یہ دیہاتی ،ریت کی لاریوں کو چلانے کے مخالف ہیں جن کا ماننا ہے کہ غیر قانونی ریت کی لاریوں کو چلایا جارہا ہے جس کے نتیجہ میں سڑک حادثات پیش آرہے ہیں۔ان متاثرہ دلتوں کا الزام ہے کہ اس معاملہ میں پولیس نے ان کو حراست میں لے کر بُری طرح ان کی پٹائی کردی ۔آج اس معاملہ میں ریاستی محکمہ داخلہ کی جانب سے حیدرآباد ہائی کورٹ میں رپورٹ پیش کی گئی۔عدالت نے سرکاری وکیل سے سوال کیا کہ یہ متاثرین کیوں زخمی ہوئے ؟سرکاری وکیل نے عدالت سے کہا کہ اس معاملہ میں سب انسپکٹر رویندر کو معطل کیا گیا ہے جس پر عدالت نے رویندر کے رول کی مکمل تفصیلات پیش کرنے کی کریم نگر کے ڈی آئی جی کو ہدایت دی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT