Tuesday , August 22 2017
Home / ہندوستان / نیشنل ہیرالڈ مقدمہ :شخصی حاضری سے راہول اور سونیا کو استثنیٰ

نیشنل ہیرالڈ مقدمہ :شخصی حاضری سے راہول اور سونیا کو استثنیٰ

نئی دہلی۔/12فبروری، ( سیاست ڈاٹ کام ) سپریم کورٹ نے آج صدر کانگریس سونیا گاندھی اور نائب صدر راہول گاندھی کو ایک بڑی راحت دیتے ہوئے نیشنل ہیرالڈ کیس میں ٹرائیل کورٹ میں شخصی حاضری سے استثنیٰ دے دیا ہے۔ تاہم عدالت زیریں کی فوجداری کارروائی میں مداخلت سے انکار کردیا۔ ٹرائیل کورٹ میں شخصی حاضری سے استثنیٰ دینے کیلئے دونوں کی عرضی کو قبول کرتے ہوئے عدالت عظمیٰ نے کہا کہ مجسٹریٹ کو یہ اختیار ہے کہ ضرورت پڑنے پر وہ کسی بھی وقت انہیں ( ملزمین ) کو شخصی طور پر طلب کرسکتے ہیں۔ جبکہ اس کیس پر سماعت 20فبروری کو ہوگی۔ بی جے پی لیڈر سبرامنیم سوامی نے عدالت میں یہ کیس دائر کیا ہے اور ملزمین کو شخصی حاضری سے استثنیٰ دینے کی مخالفت کی ہے۔تاہم جسٹس جے ایس کھیر اور جسٹس ناگپن پر مشتمل بنچ نے کہا کہ مخصوص حقائق اور حالات اور درخواست گذاروں کے مرتبہ و مقام کے پیش نظر شخصی طور پر حاضری سے استثنیٰ دینے کی ضرورت ہے۔کیونکہ ٹرائیل کورٹ میں ان کی حاضری کے لزوم سے آسانی کم مشکلات زیادہ ہوجائیں گی۔ سپریم کورٹ بنچ کے سینئر وکلاء کپل سبل، اے ایم سنگھوی اور این چھیمبا کے دلائل کی سماعت کے بعد یہ احکامات جاری کئے ہیں جنہوں نے سونیا اور راہول کی پیروی کی ہے۔کانگریس کے انگریزی روز نامہ ’ نیشنل ہیرالڈ ‘ بند ہوجانے کے بعد اس کے اثاثہ جات غیر قانونی طریقہ پر فروخت کردینے کا الزام عائد کرتے ہوئے یہ کیس دائر کیا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT