Wednesday , September 27 2017
Home / ہندوستان / نیشنل ہیرالڈ کیس میں سیاسی انتقام کا اعادہ

نیشنل ہیرالڈ کیس میں سیاسی انتقام کا اعادہ

محکمہ انکم ٹیکس کو نوٹس جاری کرنے کا اشارہ۔ کانگریس کا الزام
نئی دہلی، 12 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) نیشنل ہیرلڈ کیس میں سیاسی انتقام لینے کا الزام عائد کرتے ہوئے سینئر کانگریس لیڈر کپل سبل نے آج یہ انکشاف کیاکہ وزیر فینانس ارون جیٹلی نے انکم ٹیکس ڈپارٹمنٹ کو یہ اشارہ دیا ہے کہ مذکورہ کیس میں ان کی پارٹی کو نوٹس جاری کریں۔ انھوں نے اس معاملہ میں کانگریس کی جانب سے دھوکہ دہی اور رقومات کے غبن کے الزامات کو مسترد کردیا اور آج تک ایجنڈہ پروگرام سے مخاطب کرتے ہوئے کانگریس لیڈر نے بتایا کہ وزیر فینانس نے اپنے بلاگ اور فیس بُک پر کہا ہے کہ انکم ٹیکس ایکٹ کے تحت یہ ایک جرم ہے۔ وہ ایک ملک کے وزیر فینانس ہیں۔ کیا وہ اس طرح کا بیان دے سکتے ہیں؟ جبکہ وہ بالراست یہ اشارہ دے رہے ہیں کہ انکم ٹیکس ڈپارٹمنٹ نوٹس بھیج سکتا ہے۔ انھوں نے یہ سوال کیاکہ کن وجوہات کی بناء پر نیشنل ہیرالڈ کیس میں پارلیمنٹ کارروائی تعطل کا شکار ہے۔ واضح رہے کہ کانگریس نے سیاسی انتقام کے مسئلہ پر گزشتہ چند دنوں سے پارلیمنٹ کی کارروائی کو مفلوج بنادیا ہے۔ کپل سبل نے بی جے پی کی زیرقیادت مہاراشٹرا اور ہریانہ کے وزرائے ریونیو کے اس بیان کا تذکرہ کیاکہ نیشنل ہیرالڈ کو لیز پر مختص کردہ اراضیات کو منسوخ کردیا جائے

اور یہ دریافت کیاکہ وزرائے مال گزاری کے بیانات سے سیاسی انتقام ظاہر نہیں ہوتی ہے؟ انھوں نے بتایا کہ انگریزی اخبار نیشنل ہیرالڈ کے احیاء کے عہد پر کاربند ہے جسے 1938 ء میں جواہرلال نہرو نے قائم کیا تھا۔ سپریم کورٹ کے ممتاز وکیل اور سابق مرکزی وزیر کپل سبل نے کہاکہ پارلیمنٹ میں قانون اشیائے صارفین اور خدمات کی منظوری کے لئے کانگریس نے 3 شرائط پیش کئے ہیں جسے تسلیم کرلینے میں کانگریس اپنی مخالفت سے دستبردار ہوجائے گی۔ انھوں نے کہاکہ کانگریس تو پارلیمنٹ کی کارروائی چلانے کے حق میں ہے لیکن ایک سینئر بی جے پی لیڈر نے یہ جمہوری اصول قائم کیا ہے کہ پارلیمنٹ میں خلل اندازی پارلیمانی حکمت عملی کا ایک حصہ ہے لہذا ہم نے بھی یہ راستہ اختیار کیا ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی کے اس تبصرہ پر کہ اصلاحات کا مقصد عام آدمی کا مفاد ہونا چاہئے، جس کی مخالفت میں پارلیمنٹ میں رکاوٹ پیدا کرنا مناسب نہیں ہے۔ کپل سبل نے کہاکہ نریندر مودی جب گجرات کے 6 تک چیف منسٹر تھے، گڈس اینڈ سرویس ٹیکس کی شدید مخالفت کی تھی، انھیں اس وقت عام آدمی کیوں یاد نہیں آیا۔ کانگریس لیڈر نے کہاکہ نریندر مودی ہر روز من کی بات تو کرتے ہیں لیکن ہم چاہتے ہیں کہ وہ کبھی ڈھنگ کی بات کریں۔ کانگریس اور پارٹی کے مختلف قائدین کی جانب سے حکومت پر الزامات کے جواب میں بی جے پی مسلسل مذمتی ردعمل ظاہر کرتی آئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT