Sunday , October 22 2017
Home / دنیا / نیوزی لینڈ کلچرل اسوسی ایشن انتخابات‘عدنان مرزا صدر منتخب

نیوزی لینڈ کلچرل اسوسی ایشن انتخابات‘عدنان مرزا صدر منتخب

دوسالہ انتخابات‘ دیگر عہدیداروں اور ارکان عاملہ کا انتخاب‘ الیکشن کمشنر پی ڈی جی پالی کااعلامیہ

آکلینڈ۔7ڈسمبر ( سید مجیب کی رپورٹ ) نیوزی لینڈ  اردو ۔ ہندی کلچرل اسوسی ایشن کے دو سالہ انتخابات زیر نگرانی الیکشنکمشنر پی ڈی جی پال منعقد ہوئے ۔ الیکشن کمشنر نے انتخابی نتائج کااعلان کیا جس کے بموجب امریکہ اور نیوزی لینڈ میں اردو کی خدمات طویل عرصہ سے خدمات انجام دینے والے عدنان مرزا بلامقابلہ صدرمنتخب ہوئے ۔ دو نائب صدور کیلئے تین پرچہ جات نامزدگی مس روپا سچدیو ‘ ڈاکٹر ایم ایم بیگ تیموری اور مس سمن کپور نے داخل کئے تھے ۔ لمحہ آخر میں مس سمن کپور نے دستبرداری اختیار کرلی چنانچہ روپا سچدیو اور تیموری متفقہ طور پر نائب صدور منتخب ہوئے ۔ جنرل سکریٹری اور خازن تحسین سلطانہ بھی بلامقابلہ منتخب قرار دیئے گئے ۔ ارکان عاملہ نفیس اختر ‘ سمن کپور ‘ صائمہ صدیقی ‘ فرح علوی ‘ شیوعیاگیرت ‘ کاچی قدوائی اور محمد عبدالحق ‘ ارکان مشاورتی بورڈ محمد توقیر خان ‘ محمد مقبول احمد ‘ ڈاکٹر ایس ڈی ماتھر ‘ راجیش مہاراج ‘ ڈاکٹر پریہ پنجابی ‘ وی گری ‘ سالیسیٹر بیرسٹر قیوم خان منتخب قرار پائے ۔ سرپرست اعلیٰ رکن پارلیمنٹ بین الاقوامی سرپرست پروفیسر رئیس علوی منتخب قرار پائے ۔ محترمہ پی ڈی جی پال نے اس کا اعلان کیا ۔ جنرل سکریٹری سید مجیب نے خیرمقدمی تقریر کی اور فنڈس کی قلت کی شکایت کی ۔ خازن تحسین سلطانہ سالانہ بجٹ رپورٹ پیش کی ۔ نفیس اختر کے اظہار تشکر پر سالانہ اے جی ایم اجلاس کا اختتام عمل میں آیا ۔ قبل ازیں  حاضرین سے خظاب کرتے ہوئے اسوسی ایشن کے سرپرست اعلیٰ رکن پارلیمنٹ کنول جیت سنگھ منشی نے نیوزی لینڈ کے ہندوستانی نژاد شہریوں کی نئی نسل کو دل کی گہرائیوں سے مشورہ دیا کہ وہ دیارغیر میں بھیاپنی مادری زبان اور آبائی ثقافت کا تحفظ کریں ۔ اپنے گھروں میں صرف اپنی مادری زبان کا استعمال کریں ۔ رکن پارلیمنٹ پرمجیت پرمار نے اپنی تقریر میں کہاکہ وہ اپنی آئندہ نسل کو اپنی مادری زبان منتقل کرناچاہتے ہیں لیکن فکر مند ہیں کہ نئی نسل اپنی زبان اور ثقافت کو بھلاکر مقامی تہذیب میں ضم نہ ہوجائے ۔ اجلاس  میں ڈاکٹر یوسف قریشی ‘ پاکستان اسوسی ایشن کے عطا الرحمن قریشی نے شرکت کی ۔ پریتی ویاس نے شکریہ ادا کیا  ۔ بعدازاں موسیقی ریز پروگرام شام غزل منعقد کیا گیا ۔ طلبہ پر ڈاکٹر ماتھر نے سنگت کی۔ ارویندر واسدیو اورسندیپ سنگھ نے مختلف شعراء کا کلام ساز پر پیش کیا ۔ غوث مجید کے شکریہ پر شام غزل کا یہ پُرلطف پروگرام اختتام پذیر ہوا ۔

TOPPOPULARRECENT