Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / وائس چانسلر ایچ سی یو اپا راؤ کی معطلی کا مطالبہ ، سی پی آئی کی چلو راج بھون ریالی

وائس چانسلر ایچ سی یو اپا راؤ کی معطلی کا مطالبہ ، سی پی آئی کی چلو راج بھون ریالی

ڈاکٹر کے نارائنا اور دیگر گرفتار ، مرکزی و ریاستی حکومتوں سے فوری مداخلت کرنے کا مطالبہ
حیدرآباد ۔4 اپریل ( سیاست نیوز) کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا کی قومی عاملہ کے رکن ڈاکٹر کے نارائنا کے بشمول دودرجن سے زائد سی پی آئی کارکنوں کو پولیس نے آج اس وقت حراست میںلے لیاجب وہ خیر ت آباد ریلوے کراسنگ سے چلو راج بھون مارچ کا آغاز کیاجس کا مقصد حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی کے وائس چانسلر اپا رائو کی معطلی کے مطالبہ میں شدت پیدا کرنا تھا ۔ گرفتاری سے قبل میڈیا کو بتایا کہ وائس چانسلر آپا رائو کی ہٹ دھرمی کی وجہہ سے حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی کے ہونہا ر طالب علم روہت ویمولہ خودکشی کرنے پر مجبور ہوگیا۔ روہت ویمولہ کی خودکش نوٹ نے یہ ثابت کردیا ہے روہت کا موت خودکشی سے نہیںبلکہ یہ ایک ادارہ جاتی قتل ہے ۔ ڈاکٹر نارائنا نے کہاکہ متنازعہ وائس چانسلر پر ایس سی ‘ ایس ٹی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج ہے باوجوداسکے 22مارچ کو وہ دوبارہ حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی میںوائس چانسلر کے عہدے کا جائزہ لیا جس کے بعد یونیورسٹی کے حالات یکسر تبدیل ہوگئے ۔ وائس چانسلر اپارائو کے یونیورسٹی میں غیر قانونی داخلے کے خلاف یونیورسٹی طلبہ نے احتجاج کیااور احتجاج کو روکنے کے لئے پولیس کا بیجا استعمال کیا گیا۔ پولیس نے احتجاجی طلبہ کے ساتھ مجرموں جیسا سلوک کرتے ہوئے غیرضمانتی مقدمات کے تحت انہیںحراست میںلے کر جیلوں میںبند کردیا۔نارائنا نے کہاکہ اپا رائو کی وجہہ سے حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی کے حالت مزید کشیدگی کاشکار ہوتے جارہے ہیں۔ انہوں نے مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ وائس چانسلر اپارائو کی فی الفور معطلی عمل میںلاتے ہوئے یونیورسٹی میں حالات کو بحال کریں تاکہ طلبہ کا تعلیمی سال کو متاثر ہونے سے بچایاجاسکے۔ اس کے علاوہ انہوں نے حکومت تلنگانہ سے بھی حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی کے طلبہ او ر پروفیسر پر لگائے گئے غیرضمانتی مقدمات سے دستبرداری کا مطالبہ کیا۔ ڈاکٹر سدھاکر سی پی آئی گریٹر حیدرآباد نارتھ زون کنونیر‘ سلیم خان‘ سی پی آئی ایم یل قائد جانکی رام‘ راکیش سنگھ کے علاوہ دیگر بھی اس موقع پر موجو دتھے۔

TOPPOPULARRECENT