Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / وائس چانسلر حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی کا علامتی پتلہ نذر آتش

وائس چانسلر حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی کا علامتی پتلہ نذر آتش

عہدے سے فوری برطرف کرنے کا مطالبہ ، کانگریس طلبہ تنظیم این ایس یو آئی کا احتجاج
حیدرآباد ۔ 24 ۔ مارچ : ( سیاست نیوز ) : کانگریس کی طلبہ تنظیم این ایس یو آئی نے آج بطور احتجاج نامپلی ریلوے اسٹیشن کے قریب حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی کے وائس چانسلر کا پتلا نذرآتش کیا اور انہیں فوری عہدے سے برطرف کرتے ہوئے گرفتار کرنے کا مطالبہ کیا ۔ این ایس یو آئی کے صدر مسٹر بی وینکٹ کی قیادت میں 100 سے زائد این ایس یو آئی کارکن گاندھی بھون سے احتجاج ریالی میں نامپلی ریلوے اسٹیشن پہونچے جہاں پر انہوں نے وائس چانسلر حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی اپا راؤ کا پتلا نذر آتش کیا ۔ این ایس یو ائی کے کارکن وائس چانسلر ہٹاؤ حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی بچاؤ کے نعرے لگا رہے تھے ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے مسٹر بی وینکٹ نے کہا کہ تعلیمی اداروں میں آر ایس ایس اور بی جے پی کی بیجا مداخلت بڑھ گئی ہے ۔ آر ایس ایس کے نظریات کو پروان چڑھانے کے معاملے میں اے بی وی پی آلہ کار کے طور پر کام کررہی ہے ۔ ہندوتوا اور آر ایس ایس نظریات کی مخالفت کرنے والوں پر حملے کئے جارہے ہیں ۔ یونیورسٹی انتظامیہ بالخصوص وائس چانسلر اپا راؤ کے ظلم و زیادتی کی وجہ سے ریسرچ اسکالر روہت ویمولا نے خود کشی کی ہے ۔ وائس چانسلر بی جے پی اور اے بی وی پی کے دباؤ میں کام کرتے ہوئے یونیورسٹی کے تعلیمی ماحول کو تشدد میں تبدیل کردیا ہے ۔ جس کی این ایس یو آئی سخت مذمت کرتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کنہیا کمار کے پروگرام کو ناکام بنانے کے لیے اپا راؤ کو دوبارہ وائس چانسلر کی ذمہ داریاں سونپی گئی ہے ۔ اپا راؤ ڈیوٹی کا چارج سنبھالنے کے بعد حالت کو باقاعدہ بنانے کے نام پر یونیورسٹی کو 27 مارچ تک تعطیلات کا اعلان کردیا ہے ۔ یونیورسٹی میں طلبہ کو پانی ، برقی اور طعام سے محروم کردیا گیا ہے ۔ اپنی طرف کھانا پکانے کی کوشش کرنے والے طلبہ پر حملہ کرتے ہوئے انہیں زخمی کردیا ہے ۔ این ایس یو آئی طلبہ پر پولیس لاٹھی چارج کی مذمت کرتی ہے اور گرفتار کردہ تمام طلبہ کو فوری رہا کرنے کا مطالبہ کرتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وائس چانسلر اپا راؤ کے خلاف ایس سی ایس ٹی ایکٹ درج کیا گیا ہے مگر پولیس کی جانب سے ان کے خلاف آج تک کوئی کارروائی نہیں کی گئی ۔ پرامن احتجاج کرنے والے طلبہ پر لاٹھی چارج کرتے ہوئے انہیں گرفتار کیا گیا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT