Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / وائی ایس آر کانگریس کو قانون ساز اداروں پر ہی بھروسہ نہیں

وائی ایس آر کانگریس کو قانون ساز اداروں پر ہی بھروسہ نہیں

خصوصی ریاست کی مہم پر جی مدوکرشنما نائیڈو کی جگن موہن ریڈی پر تنقید
حیدرآباد ۔ 28 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : تلگو دیشم پارٹی نے وائی ایس آر کانگریس پارٹی قائدین کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ریاست آندھرا پردیش کے لیے خصوصی موقف حاصل کرنے آج وائی ایس آر کانگریس پارٹی قائدین اپنی جان کی قربانی دینے کا اظہار کررہے ہیں ۔ لیکن افسوس جب آندھرا پردیش کی تقسیم عمل میں لائی جارہی تھی تب خاموشی کیوں اختیار کی گئی ۔ اس سلسلہ میں وضاحت کرنے کا وائی ایس آر کانگریس پارٹی قیادت سے تلگو دیشم نے مطالبہ کیا ۔ سینئیر قائد تلگو دیشم و رکن قانون ساز کونسل مسٹر جی مدو کرشنما نائیڈو نے یہ بات کہی اور بتایا کہ وائی ایس آر کانگریس پارٹی قائدین کو قانون ساز اداروں پر بھروسہ نہ رہنے کے علاوہ ان اداروں کا ذرا بھی احترام نہیں ہے ۔ نائیڈو نے وائی ایس آر قائدین کے اس طرز عمل پر برہمی کا اظہار کیا اور کہا کہ اگر وائی ایس آر کے ارکان اسمبلی ، اسمبلی کی مراعات کمیٹی کے روبرو حاضر ہو کر اپنے افسوس کا بھی اظہار کرتے ہوتے تو ہم ان کی ضرور ستائش کرتے تھے لیکن وائی ایس آر ارکان نے استفادہ نہیں کیے ۔ مدو کرشنما نائیڈو نے وائی ایس آر کانگریس ارکان اسمبلی کو ہدف ملامت بنایا اور کہا کہ ریاست کی تقسیم کے موقعہ پر مکمل خاموشی اختیار کر کے آج یہی وائی ایس آر کانگریس پارٹی ارکان اسمبلی ریاستی عوام کے روبرو صرف مگرمچھ کے آنسو بہانے کے لیے کوشاں ہے ۔ انہوں نے یووا بھیری کے نام پر طلباء کو نہ صرف غلط راستے پر گامزن کررہے ہیں بلکہ انہیں غلط باور کرواتے ہوئے گمراہ کیا جارہا ہے ۔ تلگو دیشم رکن کونسل نے مزید کہا کہ خصوصی موقف رکھنے والی ریاستوں کے مقابلہ میں آندھرا پردیش کو صنعتوں کے قیام میں تلنگانہ ریاست کے برابر کا موقف حاصل ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT