Monday , August 21 2017
Home / ہندوستان / وادیٔ کشمیر میں سکیوریٹی فورسیس اور عوام کے مابین جھڑپیں

وادیٔ کشمیر میں سکیوریٹی فورسیس اور عوام کے مابین جھڑپیں

سرینگر 9 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) وادیٔ کشمیر میں علیحدگی پسند گروپس کی ہڑتال کے باعث معمولات زندگی مسلسل 124 ویں دن بھی مفلوج رہے۔ جنوبی کشمیر سے موصولہ اطلاع کے مطابق ضلع پلوامہ کے تہاب علاقہ میں احتجاجی مظاہرین اور سکیوریٹی فورسیس کے مابین جھڑپوں میں 6 افراد زخمی ہوگئے۔ سکیوریٹی فورسیس نے احتجاجیوں کو منتشر کرنے کے لئے آنسو گیس کے شیل چھوڑے۔ اسی طرح شمالی کشمیر کے ضلع باندی پورہ کے کلوسا علاقہ میں سکیوریٹی فورسیس نے اچانک دھاوے کئے جس کے خلاف عوام بطور احتجاج سڑکوں پر نکل آئے۔ علیحدگی پسند گروپس نے اپنے احتجاجی پروگرام میں 10 نومبر تک توسیع کی تھی اور آج عوام کو آزادی مارچ منعقد کرنے کی ہدایت دی ہے۔

آمرانہ فیصلہ واپس لینے مرکز سے ممتا بنرجی کا مطالبہ
کولکتہ 9 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر مغربی بنگال ممتا بنرجی نے حکومت کے فیصلہ کو بے رحم اور بدبختانہ قرار دیا۔ انھوں نے اس آمرانہ فیصلہ سے فی الفور دستبرداری کا مطالبہ کیا۔ مودی حکومت پر الزام عائد کیاکہ وہ بیرون ممالک سے کالا دھن واپس لانے میں ناکامی سے عوامی توجہ ہٹانے کیلئے ڈرامہ کررہی ہے۔ انھوں نے کہاکہ وہ کالا دھن، کرپشن کے خلاف لیکن عوام اور چھوٹے تاجرین کو اِس طرح کا نشانہ نہیں بنایا جاسکتا لہذا یہ آمرانہ فیصلہ فی الفور واپس لیا جانا چاہئے۔ انھوں نے کہاکہ لوگ اشیائے ضروریہ کس طرح خریدیں گے۔بینکوںمیں ایک سو روپئے کی کرنسی دستیاب نہیں اور حکومت نے اچانک فیصلہ کرتے ہوئے معاشی اُتھل پتھل پیدا کردی ہے۔اِس سے عام آدمی بُری طرح متاثر ہورہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT