Friday , July 21 2017
Home / ہندوستان / وادی میں سخت ترین پابندیاں نافذ

وادی میں سخت ترین پابندیاں نافذ

سری نگر ، 12جولائی (سیاست ڈاٹ کام) جموں وکشمیر کی گرمائی دارالحکومت سری نگر کے پائین شہر میں ایک بار پھر کرفیو جیسی پابندیاں نافذ کی گئی ہیں۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ وسطی ضلع بڈگام کے رڈبگ میں مارے گئے حزب المجاہدین کے تین جنگجوؤں میں سے سجاد احمد بٹ کا تعلق نوہٹہ سے ہے اور اس کے پیش نظر شہر میں امن وامان کی صورتحال کو بنائے رکھنے کے لئے پائین شہر میں پابندیاں نافذ کی گئی ہیں۔ انہوں نے بتایا ‘پائین شہر کے پانچ پولیس تھانوں نوہٹہ، ایم آر گنج، صفا کدل، خانیار اور رعناواری کے تحت آنے والے علاقوں میں دفعہ 144 سی آر پی سی کے تحت پابندیاں نافذ کی گئی ہیں’۔ اس دعوے کے برخلاف پائین شہر کی صورتحال بالکل مختلف نظر آئی اور سیکورٹی فورسز لوگوں کو یہ کہتے ہوئے اپنے گھروں تک ہی محدود رہنے کے لئے کہہ رہے تھے کہ علاقہ میں کرفیو کا نفاذ عمل میں لایا جاچکا ہے ۔ سرکاری ذرائع نے یو این آئی کو بتایا کہ پائین شہر میں 13 جولائی کو یوم شہدائے کشمیر کے موقع پر بھی پابندیاں نافذ رہیں گی۔ بڈگام میں ہونے والے مسلح تصادم میں نوہٹہ سے تعلق رکھنے والے جنگجو کی ہلاکت کی خبر پھیلتے ہی نوہٹہ میں نوجوانوں کی ٹولیاں سڑکوں پر نمودار ہوئیں اور آزادی حامی نعرے لگانے شروع کردیے ۔ تاہم انتظامیہ نے تشدد کے خدشہ کے پیش نظر پائین شہر میں فوری طور پر پابندیاں نافذ کیں۔ پابندیوں کو سختی سے نافذ کرنے کے لئے پائین شہر میں سینکڑوں کی تعداد میں سیکورٹی فورس اہلکار تعینات کئے گئے ہیں۔ نالہ مار روڑ کو ایک بار پھر خانیار سے لیکر چھتہ بل تک متعدد مقامات پر سیل کیا گیا ہے ۔ اس سڑک کے کچھ مقامات پر لوگوں کی نقل وحرکت کو روکنے کے لئے بلٹ پروف گاڑیاں کھڑی کی گئی ہیں۔ اس روڑ کے دونوں اطراف رہائش پذیر لوگوں نے بتایا کہ سیکورٹی فورسز نے انہیں اپنے گھروں تک ہی محدود رہنے کے لئے کہا ہے ۔ صفا کدل، نواب بازار، نواح کدل، رانگر اسٹاف، خانیار، راجوری کدل اور سکہ ڈافر میں تمام مین سڑکوں کو خاردار تار سے سیل کردیا گیا ہے ۔
سیکورٹی فورسز نے نوہٹہ میں واقع تاریخی جامع مسجد کی طرف جارہے صحافیوں کے ایک گروپ کو رانگر اسٹاف سے ہی واپس بھیج دیا۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق جامع مسجد کے علاقہ میں امن وامان کی صورتحال کو بنائے رکھنے کے لئے سیکورٹی فورسز کی بھاری جمعیت تعینات کی گئی ہے ۔ سیول لائنز میں تاہم کوئی پابندیاں نافذ نہیں کی گئی ہیں۔

 

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT