Thursday , August 24 2017
Home / شہر کی خبریں / ورنگل حلقہ پارلیمنٹ ضمنی انتخاب کیلئے آج ٹی آر ایس امیدوار کا اعلان

ورنگل حلقہ پارلیمنٹ ضمنی انتخاب کیلئے آج ٹی آر ایس امیدوار کا اعلان

چیف منسٹر کے سی آر کا وزراء اور سینئیر قائدین کے ساتھ جائزہ اجلاس : کڈیم سری ہری کی پریس کانفرنس
حیدرآباد۔/29اکٹوبر، ( سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی حلقہ لوک سبھا ورنگل کے ضمنی انتخاب کیلئے اپنے امیدوار کا اعلان جمعہ کو کرے گی۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے آج ورنگل سے تعلق رکھنے والے وزراء اور سینئر قائدین کے ساتھ جائزہ اجلاس منعقد کیا جس میں امکانی امیدوار اور پارٹی کے موقف کا جائزہ لیا گیا۔ تلنگانہ بھون میں منعقدہ اس اجلاس میں ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری، وزیر قبائیلی بہبود چندولال کے علاوہ ورنگل سے تعلق رکھنے والے عوامی نمائندوں اور پارٹی قائدین نے شرکت کی۔ بتایا جاتا ہے کہ وزراء اور قائدین نے ضمنی چناؤ میں پارٹی کی کامیابی کو یقینی قرار دیا۔ چیف منسٹر نے قائدین کو مشورہ دیا کہ وہ متحدہ طور پر انتخابی مہم چلائیں اور اپوزیشن کے مخالف حکومت پروپگنڈہ کا منہ توڑ جواب دیں۔ اجلاس میں تلگودیشم۔ بی جے پی اتحاد کے مشترکہ امیدوار کے علاوہ کانگریس اور بائیں بازو کے امیدواروں کے سبب پارٹی کے امکانات پر غور کیا گیا۔ بعد میں میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کڈیم سری ہری نے کہا کہ امیدوار کے نام کا اعلان جمعہ کے دن چیف منسٹر کریں گے۔ انہوں نے ٹی آر ایس امیدوار کی کامیابی کو یقینی قرار دیا اور کہا کہ حکومت کے ترقیاتی و فلاحی اقدامات کے سبب ضلع میں پارٹی کی لہر ہے۔ پارٹی قائدین نے امیدوار کے بارے میں اپنی اپنی رائے چیف منسٹر کے پاس پیش کی ہے اور قطعی فیصلہ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ کریں گے۔ کڈیم سری ہری نے اس یقین کا اظہار کیا کہ ورنگل میں ٹی آر ایس امیدوار کو زبردست اکثریت حاصل ہوگی اور امیدوار کوئی ہو پارٹی کی کامیابی یقینی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوام بنیادی طور پر ٹی آر ایس کے ساتھ ہیں اور اپوزیشن پر اعتماد نہیں۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کا یہ دعویٰ مضحکہ خیز ہے کہ ضلع میں حکومت کے خلاف لہر پائی جاتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ یکم نومبر کو ورنگل کے 7 اسمبلی حلقوں کے پارٹی قائدین اور کارکنوں کا اجلاس طلب کیا جائے گا۔ ہر اسمبلی حلقہ کیلئے ایک وزیر کو انچارج مقرر کیا جائے گا۔ چیف منسٹر 17 یا 18نومبر کو ورنگل میں پارٹی کی انتخابی مہم میں حصہ لیں گے۔ سری ہری نے کہا کہ کے سی آر نے انتخابات سے قبل عوام سے جو وعدے کئے تھے ان پر بتدریج عمل آوری کی جارہی ہے۔ اعلانات کے علاوہ کئی نئی اسکیمات کا آغاز کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی اور کانگریس پارٹی کو ورنگل کیلئے امیدوار دستیاب نہیں ہیں اور انہیں موزوں امیدوار کی تلاش ہے۔ انہوں نے کہا کہ ضلع میں تلگودیشم، بی جے پی اور کانگریس کا کوئی اثر نہیں ہے۔ سری ہری نے ورنگل کے انتخابی نتیجہ کو پارٹی کیلئے ریفرنڈم کے طور پر قبول کرنے سے گریز کیا۔ واضح رہے کہ کڈیم سری ہری کے استعفی کے باعث اس حلقہ میں ضمنی چناؤ ہورہا ہے۔ کے سی آر نے انہیں وزارت میں شامل کرتے ہوئے ڈپٹی چیف منسٹر نامزد کیا جس کے بعد انہوں نے لوک سبھا کی رکنیت سے استعفی دے دیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT