Saturday , August 19 2017
Home / شہر کی خبریں / ورنگل میں کامیابی کے بعد ذمہ داریاں مزید بڑھ گئیں

ورنگل میں کامیابی کے بعد ذمہ داریاں مزید بڑھ گئیں

تمام وعدے پورے کئے جائیں گے، منتخبہ نمائندوں کو عوام کے درمیان رہنے کے سی آر کی ہدایت

حیدرآباد۔ 25 ۔ نومبر (سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے پارٹی کے عوامی نمائندوں اور قائدین پر زور دیا کہ وہ خودکو عوام کی خدمت اور ان کے مسائل کی یکسوئی کیلئے وقف کردیں ۔ ورنگل کے نو منتخب رکن پارلیمنٹ پی دیاکر کے علاوہ ورنگل سے تعلق رکھنے والے وزراء ، ارکان پارلیمنٹ و اسمبلی ، ارکان قانون ساز کونسل اور سینئر قائدین نے آج کیمپ آفس پہنچ کر کے سی آر سے ملاقات کی۔ انہوں نے ورنگل میں پارٹی امیدوار کی شاندار کامیابی پر چیف منسٹر کو مبارکباد پیش کی۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر نے کہا کہ ورنگل کی عوام نے جس والہانہ انداز میں ٹی آر ایس سے وابستگی کا اظہار کیا ہے ، اس سے پارٹی کی ذمہ داریوں میں اضافہ ہوچکا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وزراء اور عوامی نمائندوں کو چاہئے کہ وہ ہمیشہ عوامی مسائل کی یکسوئی کیلئے دستیاب رہیں۔ انہوں نے کہا کہ عوامی نمائندوں اور قائدین کو ہمیشہ عوام کے درمیان رہنا چاہئے تاکہ ورنگل کی ترقی کیلئے منصوبہ پر عمل کیا جاسکے۔

انہوں نے ورنگل کے رائے دہندوں سے اظہار تشکر کیا جنہوں نے ریکارڈ اکثریت کے ساتھ ٹی آر ایس امیدوار کو کامیابی عطا کی۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ورنگل کے عوام نے ٹی آر ایس کے ساتھ جس محبت اور وابستگی کا اظہار کیا ہے وہ اسے کبھی فراموش نہیں کر پائیں گے۔ ٹی آر ایس کے امیدوار کو بھاری اکثریت سے کامیاب کرتے ہوئے ورنگل کے عوام نے نئی تاریخ رقم کی ہے۔ چیف منسٹر نے اعلان کیا کہ ورنگل کی ترقی کے سلسلہ میں جو وعدے کئے گئے،ان کی بہرصورت تکمیل کی جائے گی جن میں ٹکسٹائیل پارک کی تعمیر اور آؤٹر رنگ روڈ جیسے وعدے شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ترقیاتی و فلاحی اسکیمات میں ورنگل کو مناسب حصہ داری دی جائے گی۔ کے سی آر نے کہا کہ عوامی نمائندوں اور کارکنوں کیلئے بہت جلد ٹریننگ کیمپس منعقد کئے جائیں گے۔ چیف منسٹر نے پارٹی کارکنوں کو مشورہ دیا کہ وہ سرکاری عہدوں کے حصول کے سلسلہ میں جلد بازی کے بجائے تحمل کا مظاہرہ کریں۔ تمام کارکنوں اور قائدین کو ان کا مستحقہ مقام دیا جائے گا۔ چیف منسٹر نے کہا کہ نامزد عہدوں پر تقررات کی راہ میں الیکشن کمیشن کا انتخابی شیڈول رکاوٹ بن چکا ہے۔ حکومت ترقیاتی پروگراموں کو جاری رکھنے کیلئے الیکشن کمیشن سے اجازت حاصل کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ چیف منسٹر نے عوامی نمائندوں اور قائدین کو متنبہ کیا کہ وہ ورنگل کی کامیابی کے بعد غرور اور تکبر کاشکار نہ ہوں۔ انہوں نے مشورہ دیا کہ بجائے غرور اور تکبر کے مزید انکساری اور خدمت کے جذبہ کے ساتھ کام کرناچاہئے ۔ اس موقع پر ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری اور ضلع کے ارکان پارلیمنٹ اسمبلی موجود تھے۔

پی دیاکر کی افراد خاندان کے ہمراہ کے سی آر سے ملاقات
حیدرآباد۔ 25 ۔ نومبر (سیاست نیوز) ورنگل لوک سبھا حلقہ کے ضمنی چناؤ میں چار لاکھ 60 ہزار ووٹ کی اکثریت سے کامیابی حاصل کرنے والے ٹی آر ایس قائد پی دیاکر نے آج افراد خاندان کے ساتھ کیمپ آفس پہنچ کر چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے ملاقات کی۔ دیاکر کی اہلیہ اور بچے بھی ان کے ہمراہ تھے۔ کیمپ آفس پہنچنے پر چیف منسٹر نے ان کا استقبال کیا اور شاندار کامیابی پر مبارکباد پیش کی۔ چیف منسٹر نے ایک عام کارکن کی حیثیت سے دن رات انتخابی مہم میں مصروف رہنے پر دیاکر کی ستائش کی۔ کے سی آر نے کہا کہ غریب اور عام کارکن کو پارٹی نے لوک سبھا ضمنی چناؤ میں امیدوار بناکر یہ ثابت کردیا ہے کہ ٹی آر ایس میں کارکنوں کی کافی اہمیت ہے۔ نو منتخب رکن پارلیمنٹ نے چیف منسٹر کو یقین دلایا کہ وہ ورنگل کی ترقی کیلئے کوئی کسر باقی نہیں رکھیں گے۔

TOPPOPULARRECENT