Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / ورنگل میں کانگریس اور بی جے پی کی ضمانتیں بھی بچ نہیں پائیں گی

ورنگل میں کانگریس اور بی جے پی کی ضمانتیں بھی بچ نہیں پائیں گی

چیف منسٹر کے جلسہ کے بعد عوام کا ٹی آر ایس کی جانب جھکاؤ، ٹی ہریش راؤ
حیدرآباد ۔ 18 ۔ نومبر (سیاست نیوز) وزیر آبپاشی ہریش راؤ نے الزام عائد کیا کہ کانگریس اور بی جے پی قائدین ورنگل میں اپنی بدترین شکست سے خوفزدہ ہیں اور حکومت پر بے بنیاد الزام عائد کر رہے ہیں۔ ہریش راؤ جو ورنگل کی انتخابی مہم میں ٹی آر ایس کے انچارج کی حیثیت سے متحرک ہے، میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن کی جانب سے چیف منسٹر کے سی آر اور ٹی آر ایس حکومت کے خلاف بیان بازی سے کانگریس اور تلگو دیشم کو 10 ووٹ بھی زائد حاصل نہیں ہوں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ورنگل کی عوام نے ٹی آر ایس امیدوار کو بھاری اکثریت سے کامیاب کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے اور ہنمکنڈہ میں کل چیف منسٹر کی غیر معمولی کامیاب ریالی اس بات کا ثبوت ہے کہ ورنگل کے عوام ٹی آر ایس کے ساتھ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہنمکنڈہ کی ریالی میں عوام کی بھاری تعداد کو دیکھ کر اپوزیشن بوکھلاہٹ کا شکار ہوچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے دورہ کے بعد کانگریس اور بی جے پی امیدواروں کی ضمانت کا بچنا بھی مشکل دکھائی دے رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دن بہ دن ان دونوں جماعتوں کو شکست کا خوف کھائے جارہا ہے۔ ہریش راؤ نے کہا کہ سابق چیف منسٹر کرن کمار ریڈی نے اسمبلی میں اعلان کیا تھا کہ وہ تلنگانہ کیلئے ایک روپیہ بھی جاری نہیں کریں گے۔ اس وقت اتم کمار ریڈی اسمبلی میں موجود تھے لیکن انہوں نے چیف منسٹر کے خلاف آواز نہیں اٹھائی۔ تلنگانہ کانگریس قائدین کی تاریخ سے ورنگل کے عوام اچھی طرح واقف ہیں اور وہ ان کے بہکاوے میں آنے والے نہیں۔ ہریش راؤ نے کہا کہ ورنگل سے ہمدردی کا اظہار کرنے والے کانگریس قائدین اس وقت کیوں خاموش تھے ، جس وقت سیما آندھرا کے حکمراں تلنگانہ کے ساتھ ناانصافی کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس نے بیشتر انتخابی وعدوں کی تکمیل کرلی ہے اور 16 ماہ کی حکومت میں عوام کی بھلائی کیلئے کئی اسکیمات کا آغاز کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ورنگل میں ہیلت یونیورسٹی کا قیام کے سی آر کا کارنامہ ہے۔

TOPPOPULARRECENT