Thursday , October 19 2017
Home / شہر کی خبریں / ورنگل کا ضمنی انتخابی ماحول ٹی آر ایس کے حق میں ، اپوزیشن بوکھلاہٹ کا شکار

ورنگل کا ضمنی انتخابی ماحول ٹی آر ایس کے حق میں ، اپوزیشن بوکھلاہٹ کا شکار

ڈپٹی چیف منسٹر بنانے پر مسلمان خوش ہونے کا دعویٰ، عوام کو اپوزیشن پر اعتبار نہیں ، ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کا ادعا
حیدرآباد۔/18نومبر، ( سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے ورنگل لوک سبھا حلقہ سے ٹی آر ایس امیدوار کی کامیابی کا دعویٰ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے جلسہ میں عوام کی بھاری تعداد اور رائے دہندوں میں جوش و خروش کو دیکھتے ہوئے یہ ثابت ہوچکا ہے کہ انتخابی نتیجہ ٹی آر ایس کے حق میں آئے گا۔ محمد محمود علی جو ورنگل کی انتخابی مہم میں مصروف ہیں کہا کہ چیف منسٹر کے دورہ ورنگل کے بعد انتخابی ماحول ٹی آر ایس کے حق میں آچکا ہے اور کانگریس اور دیگر اپوزیشن جماعتیں بوکھلاہٹ کا شکار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کی مخالف حکومت مہم اور الزام تراشی کے باوجود عوام  اپوزیشن پر اعتماد کرنے کیلئے تیار نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کے انتخابی جلسہ میں عوام نے رضاکارانہ طور پر شرکت کرتے ہوئے یہ ثابت کردیا کہ وہ ٹی آر ایس حکومت کی کارکردگی سے مطمئن ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس، تلگودیشم اور بی جے پی کی جانب سے مختلف انداز سے رائے دہندوں کو لالچ دیا جارہا ہے لیکن عوام پر اس کا کوئی اثر پڑنے والا نہیں۔

 

انہوں نے کہا کہ کانگریس اور دیگر اپوزیشن جماعتیں ووٹ مانگنے کے حق سے محروم ہوچکی ہیں کیونکہ تلنگانہ ریاست کی ترقی میں ان جماعتوں کا کوئی رول نہیں۔ کئی قائدین تو ایسے ہیں جنہوں نے تلنگانہ تحریک کی مخالفت کی تھی لیکن آج ٹی آر ایس حکومت کے خلاف انتخابی مہم چلانے کیلئے میدان میں آگئے۔ محمود علی نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کو کوئی مقامی امیدوار دستیاب نہیں ہوا اسی طرح انتخابی مہم کیلئے انہیں مقامی کارکن دستیاب نہیں۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے بتایا کہ کسان اور مسلمان ٹی آر ایس کے ساتھ ہیں اور ان کے دورہ کے موقع پر جگہ جگہ مسلمانوں کی جانب سے شاندار استقبال کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ مسلمان اس بات پر خوش ہیں کہ ملک میں پہلی مرتبہ کسی پارٹی نے اپنے وعدہ کے مطابق مسلمان کو ڈپٹی چیف منسٹر کے عہدہ پر فائز کیا۔ حکومت نے مسلمانوں کو تحفظات کی فراہمی کیلئے کمیشن آف انکوائری تشکیل دیا ہے جو بہت جلد اپنی رپورٹ حکومت کو پیش کردے گا۔ انہوں نے بتایا کہ ’شادی مبارک‘ کے علاوہ غریب مسلمانوں کی معاشی پسماندگی دور کرنے کیلئے آٹو رکشا فراہمی اسکیم کا آغاز کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ غریبوں کو چھوٹے کاروبار کے آغاز کیلئے حکومت اقلیتی فینانس کارپوریشن سے راست قرضہ جات جاری کرنے کی اسکیم تیار کررہی ہے۔ محمد محمود علی نے کہا کہ ورنگل کے اقلیتی رائے دہندے ٹی آر ایس امیدوار کو بھاری اکثریت سے کامیاب کرتے ہوئے حکومت کی کارکردگی پر اپنی خوشی کا اظہار کریں گے۔

TOPPOPULARRECENT