Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / ورنگل کو ’’ سلم فری سٹی ‘‘ بنایا جائے گا: چیف منسٹر

ورنگل کو ’’ سلم فری سٹی ‘‘ بنایا جائے گا: چیف منسٹر

۔300کروڑ روپئے سے ترقیاتی کام‘ ملک کے سب سے بڑے ٹیکسٹائیل پارک کے قیام کا بھی تیقن
حیدرآباد۔/6جنوری، ( سیاست نیوز) ورنگل کی ترقی کیلئے اسپیشل ڈیولپمنٹ اتھاریٹی بنائی جائے گی۔ تاریخی کلکٹریٹ عمارت کو توڑ کر چھ منزلہ کلکٹریٹ کی تعمیر کی جائے گی۔ سنٹرل جیل اراضی پر ایجوکیشن ہب تعمیر کیا جائے گا۔ قدیم دفاتر اور مدارس کی عمارتوں کو توڑ کر نئی عمارتوں کی تعمیر ہوگی۔ ورنگل میں بے مثال ترقیاتی کاموں کو انجام دیا جائے گا جس کیلئے خصوصی ٹیم سے سروے کیا جائے گا۔ سابق فوجیوں کے گھروں کا ٹیکس معاف کیا جائے گا۔ ورنگل کیلئے 20ہزار گھروں کی تعمیر کی جائے گی۔ ان خیالات کا اظہار چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے نندنا گارڈن میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے جرنلسٹ کے دیرینہ مسائل کو حل کرنے کا تیقن دیتے ہوئے کہا کہ ضلع ورنگل میں ایک ماڈل جرنلسٹ کالونی تعمیر کی جائے گی۔ تمام سہولیات سے لیس اس کالونی کے تعمیراتی کاموں کی چیف منسٹر خود نگرانی کریں گے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ حیدرآباد کے بعد ریاست تلنگانہ کا سب سے بڑے ضلع ورنگل کو خصوصی طور پر ترقی دینے کیلئے اسپیشل ڈیولپمنٹ اتھاریٹی کے تحت 300کروڑ روپیوں سے ترقیاتی کاموں کو انجام دیا جائے گا۔ ملک کا سب سے بڑا ٹکسٹائیل پارک قائم کیا جائے گا، یہاں پر کاٹن سے گارمنٹ تک تمام اقسام ایک ہی مقام پر تیار کئے جائیںگے اس کے لئے 200تا300ایکڑ اراضی درکار ہے، اس کیلئے 100کروڑ منظور کئے گئے ہیں۔ اس پارک کے قیام سے شہر کی آبادی میں مزید 4 تا5 لاکھ آبادی میں اضافہ کا امکان ہے۔ 85کیلو میٹر کی سڑکوں کی تعمیر آر اینڈ بی کے تحت کی جائے گی۔ ضلع کے تمام تالابوں کو ترقی دی جائے گی۔ آئندہ 365 دنوں میں ورنگل کے کسان اور عوام کو پانی کی سربراہی ہوسکے اس کے لئے کاکتیہ مشن کے تحت کاموں کو انجام دیا جائے گا۔ تلنگانہ میں ایچ ایم ڈبلیو ایس اسکیم کے تحت ضلع ورنگل کے جنگاؤں اسٹیشن گھن پور، پالا کورتی، نلگنڈہ، آلیر بھونگیر، رنگاریڈی، گجویل، سدی پیٹ و دیگر علاقوں میں 130کروڑ سے کاکتیہ تالابوں کی مرمت کی جائے گی۔ ورنگل کے کسانوں کو آنے والے ماہ جون سے کاکتیہ کنال کے تحت بھیم گھن پور، بھوپال پلی، پانی سربراہی کے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ دیوادولہ لفٹ ایریگیشن اسکیم کے تحت بیاریج کے تعمیری کاموں کا سنگ بنیاد رکھا جائے گا۔ ورنگل کو ایک نالج ایجوکیشن ہب بنایا جائے گا۔ ہیلتھ یونیورسٹی کیلئے عمارت تعمیر کی جائے گی۔ دہلی پبلک اسکول، حیدرآباد پبلک اسکول کے علاوہ انٹرنیشنل اسکول، ویٹرنری کالج، اگریکلچر کالج قائم کیا جائے گا۔ کاٹن ریسرچ سنٹر کے علاوہ ٹرائیبل یونیورسٹی بھی قائم کی جائے گی تاکہ اطراف کے اضلاع ورنگل، کھمم، نلگنڈہ ، کریم نگر کے ٹرائیبلس یہاں تعلیم حاصل کرسکیں۔ ورنگل میں 20ترکاری مارکٹ تعمیر کئے جائیں گے۔ نان ویج مارکٹ کی الگ سے تعمیر ہوگی، 50ہزار عوام کی سہولیات درکار ہوں گی۔     (سلسلہ صفحہ 6پر )

TOPPOPULARRECENT