Thursday , August 17 2017
Home / Top Stories / وزیراعظم قوم سے معذرت خواہی کریں : کانگریس

وزیراعظم قوم سے معذرت خواہی کریں : کانگریس

نوٹ بندی کیخلاف زبردست احتجاجی ریالی، اُتم کمار ریڈی و دیگر کا خطاب
حیدرآباد۔  5 جنوری (سیاست نیوز) کانگریس کی جانب سے نوٹ بندی کے خلاف تاریخی چارمینار سے گاندھی بھون تک احتجاجی ریالی منظم کی گئی۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اُتم کمار ریڈی نے عجلت میں فیصلہ کرتے ہوئے ملک میں غیرمعلنہ معاشی بحران پیدا کرنے کا وزیراعظم نریندر مودی پرالزام عائد کیا۔ سابق ریاستی وزیر ڈی ناگیندر کی قیادت میں احتجاجی ریالی منظم کی گئی جس میں سینکڑوں کانگریس قائدین و کارکنوں نے شرکت کی۔ سابق مرکزی وزراء ایس جئے پال ریڈی، بلرام نائیک، قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل محمد علی شبیر ، سابق صدر پردیش کانگریس کمیٹی وی ہنمنت راؤ، پنالہ لکشمیا، کانگریس کے رکن راجیہ سبھا ایم اے خان ، سابق رکن پارلیمنٹ انجن کمار یادو، صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ محمد خواجہ فخرالدین ، صدر تلنگانہ مہیلا کانگریس این شاردا ،صدر تلنگانہ یوتھ کانگریس انیل کمار یادو ، صدر این ایس یو آئی ٹی بی وینکٹ ، جنرل سیکریٹری تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی ایس کے افضل الدین، محمد مقصود احمد، سید عظمت اللہ حسینی، عظمیٰ شاکر ترجمان، سید نظام الدین، سابق سیکریٹریز سید یوسف ہاشمی، ڈاکٹر ایم اے انصاری، ترجمان کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ سید فاروق پاشاہ قادری صدر گریٹر حیدرآباد سٹی کانگریس اقلیتی ڈپارٹمنٹ شیخ عبداللہ سہیل سابق کارپوریٹرس ایس محمد واجد حسین، محمد غوث ، معراج محمد کے علاوہ دوسرے قائدین موجود تھے۔ کیپٹن اتم کمار ریڈی نے کہا کہ وزیراعظم کے ایک غلط فیصلے سے سارے ملک میں غیریقینی صورتحال پیدا ہوگئی۔ ملک معاشی بحران سے دوچار ہوچکا ہے۔ وزیراعظم نے 50 دن کی مہلت طلب کی تھی۔ 55 دن مکمل ہونے کے باوجود عوام کو کوئی راحت نہیں مل پائی۔ کرنسی کی اچانک قلت پیدا ہوجانے سے عوامی مسائل سے دوچار ہوئے ہیں۔ محمد علی شبیر نے نوٹ بندی کو ناکام قرار دیتے ہوئے کہا کہ مقررہ مہلت میں منسوخ کردہ تمام کرنسی بینکوں میں ڈپازٹ ہوچکی ہے۔ کالا دھن کتنا آیا ہے، وضاحت کرنے کی وزیراعظم سے اپیل کی اور کہا کہ نوٹ بندی سے ملک میں 100 سے زیادہ افراد فوت ہوگئے ہیں۔ 20,000 سے زیادہ شادیاں ملتوی ہوگئیں، 70% کاروبار متاثر ہوا ہے۔ ملک کی شرح آمدنی گھٹ گئی ہے۔ کالا دھن ،کرپشن اور دہشت گردی کو کنٹرول کرنے میں ناکام ہونے والے وزیراعظم نریندر مودی قوم سے معذرت خواہی کریں۔ سابق مرکزی وزیر ایس جئے پال ریڈی نے نوٹ بندی کو ایک بڑا اسکام قرار دیتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم کے غیردانشمندانہ فیصلے سے ملک کے عوام کو بہت بڑی مصیبت جھیلنی پڑی ہے۔ عوام دفاتر اور گھروں میں کم، بینکوں اور اے ٹی ایمس کی قطاروں میں زیادہ دیکھے گئے ہیں۔ وزیراعظم اپنی غلطی کا اعتراف کریں اور معذرت خواہی کریں۔ سابق وزیر ڈی ناگیندر نے کہا کہ 500 اور 1000 روپئے کی نوٹوں کو اچانک بند کردینے سے ملک کے عوام سکتہ میں آگئے۔ وزیراعظم کا فیصلہ ناکام ہوگیا ہے، کیونکہ منسوخ شدہ تمام نوٹ بینکوں میں جمع ہوگئے ہیں، لیکن وزیراعظم کے ایک غلط فیصلے سے ملک کے سارے عوام کو اس کی سزا بھگتنی پڑی ہے۔ چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر عوام کے مسائل کو وزیراعظم کے سامنے پیش کرتے ہوئے عوامی مفادات کا تحفظ کرنے کے بجائے مودی کی واہ واہ کرنے میں سارا وقت ضائع کرچکے ہیں جس کی کانگریس پارٹی سخت مذمت کرتی ہے اور عوامی مسائل کی یکسوئی تک کانگریس پارٹی اپنے احتجاج کو جاری رکھے گی۔ کانگریس کی ریالی اور جلسہ کو کامیاب بنانے پر ڈی ناگیندر نے پارٹی کیڈر اور سینئر قائدین سے اظہار تشکر کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT