Thursday , October 19 2017
Home / Top Stories / وزیراعظم نریندر مودی سرکاری دورہ روس پر ماسکو پہنچ گئے

وزیراعظم نریندر مودی سرکاری دورہ روس پر ماسکو پہنچ گئے

’فرینڈس آف انڈیا ‘ میں مودی کے استقبال کیلئے تہذیبی ورثہ کی نمائش
ماسکو ۔ 23 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم ہند نریندر مودی آج دو روزہ سرکاری دورہ ہند پر ماسکو پہنچ گئے۔ توقع ہیکہ وہ اس موقع پر دفاع، نیوکلیئر برقی توانائی اور ہائیڈرو کاربن کے شعبوں میں کئی بڑے معاہدے کریں گے تاکہ دونوں ممالک کے خصوصی اور مراعات یافتہ دفاعی تعلقات میں اضافہ کیا جاسکے۔ معاشی سرگرمی اور دفاع کے شعبوں میں تعلقات میں توسیع امکان ہیکہ 16 ویں ہند ۔ روس سالانہ چوٹی کانفرنس مذاکرات کا مرکزی موضوع ہوں گے۔ یہ مودی اور صدر روس ولادیمیر پوٹن کے درمیان دوسرے مذاکرات ہوں گے۔ علاوہ ازیں دونوں قائدین مختلف عالمی مسائل جیسے شام کی صورتحال اور دہشت گردی سے نمٹنے پر بھی تبادلہ خیال کریں گے۔ اپنے دورہ کا لب و لہجہ مقرر کرتے ہوئے نریندر مودی نے کہا کہ روس ہندوستان کا دنیا بھر میں انتہائی قابل قدر دوست ہے اور وہ پوٹن کے ساتھ کل اپنے مذاکرات کے سلسلہ میں پرامید ہے۔ مودی کی روس پر آمد کے پہلے دن عیسائی تہوار منایا جائے گا۔ پوٹن وزیراعظم کے اعزاز میں آج رات ایک نجی عشائیہ ترتیب دیں گے۔ دونوں قائدین کئی ہندوستانی اور روسی سی ای اوز پر مشتمل ایک گروپ سے کریملن میں تبادلہ خیال کریں گے۔ مغربی ممالک کی تحدیدات سے روس کی معیشت بری طرح متاثر ہے۔ مغربی ممالک نے یوکرین کے تنازعہ کی بناء پر روس پر تحدیدات عائد کر رکھی ہیں۔ ہندوستان اور روس کے درمیان موجودہ تجارت تقریباً 10 ارب امریکی ڈالر مالیتی ہے اور دونوں ممالک چاہتے ہیں کہ آئندہ 10 سال میں اسے 30 ارب امریکی ڈالر مالیتی کردیا جائے۔ فرینڈس آف انڈیا پروگرام میں تقریباً 3 ہزار افراد کی شرکت کل متوقع ہے۔ وزیراعظم مودی روس کے قومی بحران انتظامیہ مرکز کا بھی دورہ کریں گے۔ باہمی مسائل کے علاوہ مودی اور پوٹن امکان ہیکہ متعدد عالمی مسائل پر بھی تبادلہ خیال کریں گے۔ ہندوستان آزاد تجارتی معاہدہ کیلئے بھی روس پر زور دے گا۔ معتمد خارجہ ایس جئے شنکر نے تفصیلات کا انکشاف کئے بغیر بتایا کہ مودی اور پوٹن دفاع اور نیوکلیئر توانائی کے شعبوں میں تعاون میں اضافہ پر تبادلہ خیال کریں گے۔ ماسکو میں آمد پر وزیراعظم نریندر مودی کے استقبال کیلئے فرینڈس آف انڈیا پروگرام میں ہندوستان کے مالا مال تہذیبی ورثہ اور روایات کا مظاہرہ کیا جائے گا جبکہ کل مودی کے عوامی استقبال میں 3 ہزار افراد کی شرکت متوقع ہے۔

 

وزیراعظم ہند کے اعزاز میں صدر روس کا نجی عشائیہ
ماسکو ۔ 23 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی کے اعزاز میں آج صدر روس ولادیمیر پوٹن نے ایک نجی عشائیہ کریملن میں ترتیب دیا جس کے دوران دونوں قائدین نے باہمی دلچسپی کے کئی موضوعات پر سرسری بات چیت کی۔ اس ملاقات سے چند گھنٹے قبل نریندر مودی ماسکو پہنچے تھے جہاں ان کا سرخ قالین استقبال کیا گیا تھا۔ عشائیہ پر دوستانہ ماحول میں صدر پوٹن نے وزیراعظم سے سرسری بات چیت کی۔ وزارت خارجہ کے ترجمان وکاس سوروپ نے اپنے ٹوئیٹر پر دونوں قائدین کے مصافحہ کے علاوہ ملاقات کی دیگر تصاویر بھی شائع کی ہیں۔ مودی اور پوٹن کل سولہویں ہند ۔ روس سالانہ چوٹی کانفرنس سطح کے مذاکرات کل کریملن میں کریں گے جس کے بعد توقع ہیکہ کئی معاہدوں پر کئی اہم شعبوں جیسے دفاع، نیوکلیئر برقی توانائی، ہائیڈروکاربن اور تجارت میں باہمی تعاون میں اضافہ کے معاہدوں پر دستخط کئے جائیں گے۔ کل ہی امکان ہیکہ نئے کارخانوں کے منصوبوں کو بھی قطعیت دی جائے گی۔ گذشتہ ہفتہ اعلیٰ سطحی دفاعی کونسل نے روسی فضائی دفاعی نظام کی خریداری کی منظوری دی تھی۔

 

ہندوستان رنگارنگ پھولوں کا گلستان، عوام سے اتحاد کی مودی کی اپیل

ماسکو ۔ 23 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) عدم رواداری پر مباحث کے دوران وزیراعظم نریندر مودی نے کہا کہ ہندوستان شفافیت، مختلف عقائد اور تہذیبوں کے تنوع کے احترام کی قدیم روایت رکھتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان دنیا کی قدیم ترین تہذیبوں میں سے ایک ہے اور یہ تمدن یقین رکھتا ہیکہ پوری دنیا ایک خاندان ہے اور انسانیت فطرت کا اٹوٹ حصہ ہے۔ کوئی بھی اس سے بالاتر نہیں ہے اور نہ اس سے زیادہ نمایاں حیثیت رکھتا ہے۔ وہ روس کے خبر رساں ادارہ اتار تاس سے دو دورہ روزہ روس روانگی سے پہلے بات چیت کررہے تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اسی وجہ سے شفافیت، مختلف عقائد اور تہذیبوں کے تنوع کا احترام اور فطرت سے ہم آہنگی کے ساتھ زندگی گذارنے کی دیرینہ قدیم روایت پیدا ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں عدم رواداری کے واقعات جیسے ایک شخص کو دادری میں گائے کا گوشت کھانے کے شبہ میں زدوکوب کرکے ہلاک کردیا گیا، ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان دنیا کے تمام بڑے مذاہب کے ماننے والے عوام کا ملک ہے۔ یہاں 22 سرکاری زبانیں اور متنوع تمدن اور اخلاقیات پائی جاتی ہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ اس کے باوجود ملک بھر میں تنوع کے باوجود اتحاد کا احساس موجود ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان رنگارنگ پھولوں کا ایک گلستاں ہے۔ جب بھی روایات کے تحفظ کا معاملہ سامنے آتا ہے ہم سب متحد ہوجاتے ہیں۔

 

 

TOPPOPULARRECENT