Friday , September 22 2017
Home / سیاسیات / وزیراعظم پر راہول گاندھی کی تنقید ‘ صرف شہرت کا ایک حربہ

وزیراعظم پر راہول گاندھی کی تنقید ‘ صرف شہرت کا ایک حربہ

راہول گاندھی اور کانگریس حقیقت کو ہنوز تسلیم نہیں کرسکے ‘ مرکزی وزیر برائے پارلیمانی اُمور وینکیا نائیڈو کی تقریر
بنگلورو۔20ستمبر ( سیاست ڈاٹ کاٹ ) نائب صدرکانگریس راہول گاندھی پر  وزیراعظم نریندر مودی کی ’’ سوٹ بوٹ کی سرکار‘‘ تبصرہ پر اُن کی مذمت کرتے ہوئے مرکزی وزیر ایم وینکیا نائیڈو نے اسے ’’ اُن کا بچپن اور ناپختگی کی علامت‘‘ قرار دیا اور کہا کہ وہ وزیراعظم پر تنقید صرف اس لئے کررہے ہیں تاکہ اخباروں میں برقرار رہیں ۔ وینکیا نائیڈو نے راہول گاندھی کو مذمت کا نشانہ بنانے کی کوشش کرتے ہوئے کہا کہ راہول گاندھی کے پردادا جواہر لال نہرو اور والد راجیو گاندھی بھی سوٹ بوٹ پہنتے تھے ۔ اب راہول گاندھی سوٹ بوٹ پر تنقید کررہے ہیں ۔ وہ اپنے پردادا اور والد کے لباس کو بھول گئے ‘ کیا وہ اپنے پردادا اور والد پر تنقید کررہے ہیں ۔ ان کا مذاق اڑا رہے ہیں ۔ کانگریس قائد کے سوٹ بوٹ کے تبصرہ پر جو انہوں نے بہار کے ایک انتخابی جلسہ میں کیا ہے ‘ وینکیا نائیڈو نے کہا کہ بولنے سے پہلے سوچ لیا کیجئے آپ کی تقریر میں بالغ نظری ہونا چاہیئے ‘ بچپن اور ناپختگی نہیں ۔ وزیراعظم پر اس قسم کے سطحی تبصرے وہ بھی اُن کے شخصی لباس کے خلاف مناسب نہیں ہے ۔ وزیراعظم کو ایک سوٹ بطور تحفہ دیا گیا تھا اور اس کا بھی نیلام کر کے اس کی قیمت عوامی مقصد کیلئے استعمال کی گئی ۔ میں نہیں جاتا کہ راہول گاندھی کی تقریر کون تحریر کررہے ہیں ‘ جو بھی کررہے ہیں وہ انہیں گمراہ کررہے ہیں ۔

بہار اسمبلی انتخابات کیلئے اپنی مہم کا آغاز کرتے ہوئے راہول گاندھی نے کل مودی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اسے سوٹ بوٹ کی سرکار قرار دیا تھا اور خبردار کیا تھا کہ اگر این ڈی اے بہار میں برسراقتدار آجائے تو عوام اُن کی روزی روٹی سے بھی محروم ہوجائیں گے ۔ وینکیا نائیڈو نے کہا کہ وہ اس موضوع پر زیادہ توجہ نہیں دینا چاہتے ‘ وہ ( راہول ) ‘‘ وزیراعظم پر تنقید صرف شہرت کے حصول کیلئے کررہے ہیں ۔ انہوں نے کانگریس پر الزام عائد کیا کہ وہ اب بھی حقیقت کو تسلیم نہیں کرپائی اور حکومت کے خلاف غلط معلومات کی مہم چلا رہی ہے ۔ الفاظ کمزور ہیں لیکن کارنامے زبردست ہے ۔ کانگریس کی یہی پالیسی برسوں سے جاری ہے ۔ مختلف سماجی طمانیت اسکیموں کا تذکرہ کرتے ہوئے جو مرکز نے شروع کی ہیں وینکیا نائیڈو نے کہاکہ مدرا یوجنا بے نقاب کی جائے گی تاکہ عام چھوٹے تاجر ‘ ٹھیلہ بنڈی پرکاروبار کرنے والے اور بیروزگار نوجوان قرض حاصل کرسکیں ۔ اس اسکیم کا اعلان 25ستمبر کو کیا جائے گا ۔ انہوں نے کانگریس حکومتوں پر الزام عائد کیا کہ انہوں نے لاکھوں ایکڑ اراضی زبردستی حاصل کرلی تھی ۔ انہوں نے قائدین کو چیلنج کیا کہ انہوں نے حکومتوں کو کاشتکاروں کی اراضی جو صرف ایک ریاست ہریانہ میں 80ہزار ایکڑ تھی لوٹنے کی اجازت دے دی ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس اور اس کے قائدین حصول اراضی قانون کے بارے میں آج ایک جلسہ عام منعقد کررہے ہیں ‘ تم می ںاگرہمت ہے تو اس بات کی وضاحت کردکھائیں ۔ انہوں نے کہاکہ وزیرخارجہ سشماسوراج پر کانگریس کی تنقید خود اس پر اُلٹ گئی ہے ۔انہیں اب پارلیمنٹ میں اس سوال کا جواب دینا پڑے گا کہ للت مودی کو ملک سے فرار ہونے کی اجازت کیوں دی گئی ۔

TOPPOPULARRECENT