Friday , September 22 2017
Home / سیاسیات / وزیراعظم کا 15نکاتی پروگرام‘ مسلمانوں کیلئے علحدہ فنڈ نہیں

وزیراعظم کا 15نکاتی پروگرام‘ مسلمانوں کیلئے علحدہ فنڈ نہیں

نئی دہلی۔19جولائی ( سیاست ڈاٹ کام ) مرکز نے وزیراعظم کے نئے 15نکاتی پروگرام میں مسلمانوں کی بہبود کیلئے کوئی علحدہ فنڈس مختص نہیں کئے ہیں ۔ حق معلومات قانون RTI کے تحت پوچھے گئے ایک سوال سے یہ انکشاف ہوا ہے کہ وزیراعظم کے پروگرام میں مسلمانوں کیلئے کچھ نہیں ہے ۔ وزارت اقلیتی اُمور نے آر ٹی آئی کے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ وزیراعظم کے 15نکاتی پروگرام میں اقلیتوں کی بہبود کیلئے کوئی علحدہ بجٹ نہیں ہے  جو کچھ بجٹ مقرر کیا گیا ہے اس میں سے قابل لحاظ رقم اقلیتی آبادی والے علاقوں میں مختلف اسکیمات کے تحت استعمال کیا جائے گا ۔ مرادآباد کے ایک کارکن  نے اسکیمات کے تعلق سے معلومات حاصل کرنے کیلئے درخواست دی تھی ۔ وزیراعظم کے 15نکاتی پروگرام کا 2005ء میں یو پی اے حکومت کی جانب سے آغاز ہوا  تھا ۔ یہ ایک اہم ترین پروگرام ہے جس میں مختلف محکموں اور وزارتوں کی جانب سے تیار کردہ اسکیمات اور اقدامات کا ذکر ہے ۔ اقلیتی اُمور کی وزارت بھی اس میں شامل ہے ۔
پروگرام کے تعلق سے مملکتی وزیر اقلیتی اُمور مختار عباس نقوی نے کہا کہ اس پروگرام کے لئے کوئی علحدہ بجٹ نہیں ہے ۔ پروگرام کے آغاز کے دنوں سے ہی ایسا کوئی بجٹ مختص نہیں کیا گیا جبکہ حکومت ہر ایک کی بہبود کیلئے اپنے عہد کی پابند ہے ۔ آر ٹی آئی کے مطابق وزارت نے ملٹی سیکٹرل ڈیولپمنٹ پروگرام کو آگے  بڑھایا ہے جس کے تحت اقلیتوں کے معیار زندگی کو بہتر بنایا جائے گا ۔
ان کیلئے سماجی و معاشی انفرااسٹرکچر فراہم کرتے ہوئے بنیادی سہولتیں دی جائیں گی ۔ سال2014 – 15ء میں ان کی وزارت نے 2015 مارچ تک ایم ایس ڈی کے تحت مختلف ریاستوں کو 770 کروڑ روپئے جاری کئے ہیں ۔ آر ٹی آئی کے مطابق 11وزارتوں کی طرح اسکیمات کو اس پروگرام کے تحت احاطہ کیا گیا ہے ۔ اقلیتی وزارت کی 7اسکیمات کو اس پروگرام میںشامل کیا گیاہے ۔ ان می ںپری میٹرک اسکالرشپ ‘ میرٹ کم فیس اسکالرشپ‘ مولانا آزاد نیشنل فیلو شپ برائے اقلیتی طلبہ بھی شامل ہے ۔

TOPPOPULARRECENT