Friday , September 22 2017
Home / Top Stories / وزیراعظم کیلئے کے سی آر ، اسد الدین اویسی

وزیراعظم کیلئے کے سی آر ، اسد الدین اویسی

حیدرآباد ۔ 10 ڈسمبر (سیاست نیوز) نوٹ بندی کے معاملے میں وزیراعظم نریندر مودی کیلئے چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر، صدر مجلس اسدالدین اویسی ثابت ہوئے ہیں۔ واضح رہیکہ چیف منسٹر کے سی آر اپنے پارٹی کے ارکان اسمبلی، وزراء اور اہم قائدین کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ مرکزی حکومت کی جانب سے ٹی آر ایس کو اقتدار سے بیدخل کرتے ہوئے تلنگانہ میں صدر راج نافذ کرنے کی سازش کی جارہی تھی۔ تاہم بروقت اس کی اطلاع مجھے (کے سی آر) دیتے ہوئے اسد بھائی نے احتیاطی اقدامات کرنے میں کافی مدد کی تھی۔ یہی بات وزیراعظم نریندر مودی نے ٹی آر ایس کے ارکان پارلیمنٹ سے ایک ملاقات میں کہی ہے۔ نوٹ بندی کے بعد ملک میں افراتفری پھیلی ہوئی تھی۔ تمام اپوزیشن جماعتیں انہیں تنقید کا نشانہ بنارہی تھی۔ تب چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر نے نوٹ بندی فیصلے کی تائید کرتے ہوئے بہت بڑی طاقت فراہم کی ہے۔ حکومت کی مدد کرنے کیلئے الفاظ ایک ہی ہے مگر شخصیتیں تبدیل ہوئی ہیں۔ نریندر مودی کیلئے کے سی آر، اسد الدین اویسی ثابت ہوئے ہیں۔ ٹی آر ایس کے ارکان پارلیمنٹ کا ایک وفد جس میں جتیندر ریڈی، ونود کمار، ڈاکٹر بی نرسیا گوڑ شامل تھے، وزیراعظم سے ملاقات کرتے ہوئے چیف منسٹر کے سی آر کا مکتوب انہیں پیش کیا اور چیف سکریٹری  پردیپ چندرا کی میعاد میں توسیع دینے کی اپیل کی، جس پر نریندر مودی نے مثبت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے نوٹ بندی کے بعد تلنگانہ کی صورتحال سے واقفیت حاصل کی۔ بعدازاں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے ٹی آر ایس کے رکن پارلیمنٹ جتیندر ریڈی نے کہا کہ 500 اور 1000 روپئے کی نوٹ منسوخ کرنے کے بعد ملک کے عوام میں بے چینی کی کیفیت پائی جارہی تھی اور اپوزیشن جماعتیں انہیں تنقید کا نشانہ بنارہے تھے۔ سارے ملک میں چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر واحد قائد ہے جنہوں نے نوٹ بندی کی مکمل تائید و حمایت کا اعلان کرتے ہوئے بہت بڑا حوصلہ بخشا ہے، جس سے مجھے بہت بڑی طاقت ملی ہے۔ انہوں نے صرف میرے فیصلے کی تائید ہی نہیں کی بلکہ نوٹ بندی کو کامیاب بنانے کیلئے مفید تجاویز اور مشورے دیئے ہیں، جس پر چیف منسٹر تلنگانہ کا شکرگذار ہوں اور یہی نہیں نوٹ بندی کے مسئلہ پر پارلیمنٹ دو ہفتوں سے تعطل کا شکار ہے۔ اپوزیشن جماعتیں پارلیمنٹ کی کارروائی چلنے نہیں دے رہے ہیں۔ ان حالت میں ٹی آر ایس نے پارلیمنٹ میں قاعدے 193 کے نوٹ بندی پر مباحث کا آغاز کرتے ہوئے مجھ پر بہت بڑا احسان کیا ہے جس کو میں ہمیشہ یاد رکھوں گا۔

TOPPOPULARRECENT