Monday , September 25 2017
Home / سیاسیات / وزیراعظم کے بہار پیاکیج کا مضحکہ

وزیراعظم کے بہار پیاکیج کا مضحکہ

ایک عہدہ ایک پنشن اسکیم جیسا حشر ہونے کا اندیشہ ، نائب صدر کانگریس راہول گاندھی کا بیان

امیتھی 18 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) راہول گاندھی نے آج وزیراعظم نریندر مودی کے 1.25 لاکھ کروڑ روپئے کا مالیتی پیاکیج بہار کے لئے جہاں عنقریب انتخابات ہونے والے ہیں، اعلان کرنے کا مذاق اُڑاتے ہوئے کہاکہ اُن کی عادت ہے کہ ووٹوں کے لئے ایسے وعدے کرتے ہیں۔ انھیں اندیشہ ہے کہ اس اعلان کا حشر بھی ’’ایک عہدہ ایک پنشن‘‘ اسکیم کی طرح نہ ہوجائے۔ نائب صدر کانگریس نے کہاکہ سابق فوجیوں کا جہاں تک معاملہ ہے وہ رقم کی قلت کا شکار ہیں لیکن اُن کے پاس بیرونی دوروں کے لئے رقم موجود ہے فوجیوں کے لئے نہیں۔ چند گھنٹے قبل وزیراعظم نے بہار کے لئے 1.25 لاکھ کروڑ روپئے کے پیاکیج کا اعلان کیا تھا۔ راہول گاندھی نے کہاکہ اُنھوں نے اسی طرح ’’ایک عہدہ ایک پنشن‘‘ اسکیم کا بھی وعدہ کیا تھا لیکن آج سابق فوجی جنتر منتر پر مرن برت کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔ اُنھوں نے کہاکہ وزیراعظم نے عوام کے ساتھ مذاق کیا ہے۔ کیا وہ نہیں جانتے کہ عوام اُن کے مذاق کو سمجھ جائیں گے۔

کانگریس قائد نے عوام کو یاد دہانی کی کہ نریندر مودی نے بیرون ملک سے کالا دھن وطن واپس لانے کا بھی وعدہ کیا تھا اور کہا تھا کہ برسر اقتدار آنے پر ہر ہندوستانی کے بینک کھاتے میں 15 لاکھ روپئے جمع کروائے جائیں گے۔ راہول گاندھی نے سوال کیاکہ اُن کے اِس وعدے کا کیا ہوا؟ مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی صرف یہ کہتے ہیں کہ ہندوستان تیز رفتار ترقی نہیں کررہا ہے لیکن جی ڈی پی کا اندازہ کرنے کے بعد اُنھوں نے اپنا لب و لہجہ تبدیل کردیا۔ پوری دنیا کہہ رہی ہے کہ یہ آپ نے کیا کیا۔ نائب صدر کانگریس نے کہاکہ حکومت ترمیم شدہ حصول اراضی قانون کی پارلیمانی تائید حاصل کرنے سے قاصر رہی ہے۔ اُنھوں نے دعویٰ کیاکہ اُن کی پارٹی نے کاشتکاروں کی اراضی بچالی ہے۔ نریندر مودی حکومت صرف سرمایہ داروں کے لئے کام کررہی ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ کانگریس کی لڑائی خالص دیہی عوام کے لئے ہے۔

TOPPOPULARRECENT