Monday , August 21 2017
Home / سیاسیات / وزیراعظم کے دورہ کے خلاف سیاہ پتنگیں اڑائی جائیں گی

وزیراعظم کے دورہ کے خلاف سیاہ پتنگیں اڑائی جائیں گی

بلیا ( اترپردیش ) ۔ 22 ۔ اپریل : ( سیاست ڈاٹ کام ) : سماج وادی پارٹی کے بعد کسانوں کے ایک گروپ اور مقامی ایک تنظیم نے یکم مئی کو وزیراعظم کے دورہ کی مخالفت کا اعلان کیا ہے ۔ کسانوں کا الزام ہے کہ لکھنو ۔ بلیا نیشنل ہائی ویز سے متصل مالدے پور میں وزیر اعظم کے دورہ کی تیاریوں کیلئے ان کی فصلوں کو تہس نہس کردیا گیا جہاں پر وزیر اعظم نریندر مودی ، خط غربت سے نیچے زندگی گذارنے والی خواتین کو ایل پی جی کنکشن فراہم کرنے کیلئے پردھان منتری اجوالا یوجنا کا آغاز کریں گے ۔ برہم کسانوں نے کل یہاں احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے نقصان زدہ فصلوں کیلئے معاوضہ ادا کرنے کا مطالبہ کیا ۔ جنہیں ایک مقامی تنظیم پوآنچل پیپلز پارٹی کی تائید حاصل ہے ۔ انہوں نے وزیر اعظم کے مجوزہ کی مخالفت کا اعلان کیا ہے ۔ گرام پردھان ونودپاسوان نے الزام عائد کیا ہے کہ کسانوں سے مشاورت کیے بغیر کھیتوں کو اجاڑ دیا تاکہ وزیر اعظم کے خطاب کیلئے جلسہ گاہ تعمیر کیا جاسکے ۔
انہوں نے یاد دہانی کی کہ لوک سبھا انتخابات کے وقت بھی اسی مقام پر نریندر مودی کا جلسہ منعقد کیا گیا اور کسانوں کو مناسب معاوضہ ادا کرنے کا تیقن دیا گیا لیکن اب تک وعدہ کی تکمیل نہیں کی گئی ۔ پورآنچل پیپلز پارٹی نے یہ اعلان کیا ہے کہ وزیر اعظم کے دورہ کی مخالفت میں سیاہ پتنگیں اڑائی جائیں گی ۔ پارٹی کے سربراہ انوپ پانڈے نے بتایا کہ پورآنچل کئی ایک مسائل پسماندگی ، بیروزگاری اور بھوکمری کا شکار ہے ۔ اور بی جے پی اس علاقہ کی تمام نشستوں سے کامیابی کے باوجود ایک بھی مسئلہ حل نہیں کیا ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کے دورہ کا مقصد مجوزہ اسمبلی انتخابات کے لیے رائے عامہ ہموار کرنا ہے اور بی جے پی کو عوامی مسائل سے کوئی سروکار نہیں ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT