Saturday , September 23 2017
Home / Top Stories / وزیراعظم کے کرپشن کی تمام تفصیلات میرے پاس موجود

وزیراعظم کے کرپشن کی تمام تفصیلات میرے پاس موجود

لوک سبھا میں کئی مسائل پر اظہار ِ خیال کا اعلان : راہول گاندھی ، وزیراعظم پر تبصرہ سال کا بہترین مذاق : رجیجو
نئی دہلی۔ 14 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) یہ دعویٰ کرنے کے بعد کہ اگر وہ تقریر کریں تو ’’زلزلہ‘‘ آجائے گا، راہول گاندھی نے آج الزام عائد کیا کہ ان کے پاس وزیراعظم نریندر مودی کے ’’شخصی کرپشن‘‘ کی تمام تفصیلات موجود ہیں۔ مرکزی وزیر برائے پارلیمانی اُمور اننت کمار نے راہول گاندھی کے الزام کو جھوٹا اور بے بنیاد اور انتہائی بدبختانہ قرار دیتے ہوئے اسے مسترد کردیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ تبصرہ اُن (راہول) کی مایوسی کا اظہار ہے۔ انہیں ملک سے معافی مانگنی چاہئے۔ انہوں نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ یہ الزام راہول گاندھی نے مایوسی کے عالم میں عائد کیا ہے۔ مرکزی وزیر مملکت برائے داخلہ نے نریندر مودی پر راہول گاندھی کے تبصرہ کو کہ وزیراعظم پارلیمنٹ میں تقریر کرنے سے ’’خوف زدہ‘‘ ہیں، جاریہ سال کا بہترین مذاق قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ ہر شخص کا یہی احساس ہے کہ راہول گاندھی، وزیراعظم کی تقریری صلاحیتوں سے خوفزدہ ہیں۔ اگر وہ تقریر کریں تو کوئی زلزلہ نہیں آئے گا بلکہ غبارے کی ہوا خارج ہوجائے گی۔ راہول گاندھی نے کہا کہ وہ کئی مسائل پر لوک سبھا میں تقریر کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دیکھنا یہ ہے کہ کیا حکومت اس کی اجازت دیتی ہے، انہوں نے کہا کہ میں مخاطب کرنے کیلئے ہی یہاں موجود ہوں۔ حکومت مجھے اس کی اجازت دیتی ہے یا نہیں، یہ دیکھنا ابھی باقی ہے۔

راہول گاندھی نے گزشتہ جمعہ کے دن الزام عائد کیا تھا کہ نوٹوں کی تنسیخ کے بارے میں حکومت مباحث سے فرار اختیار کررہی ہے، کیونکہ اسے خوف ہے کہ حقائق منظر عام پر آجائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ جب وہ ایوان میں نوٹوں کی تنسیخ کے بارے میں تقریر کرنا چاہتے ہیں تو وزیراعظم ایوان میں بیٹھنے کی بھی ہمت نہیں کرسکتے۔ انہوں نے کہا کہ یہ ہندوستان کی تاریخ کا سب سے بڑا اسکام ہے اور وہ ایوان میں ہر چیز اجاگر کرنا چاہتے ہیں۔ پارلیمنٹ کا سرمائی اجلاس آج سے دوبارہ شروع ہوا جبکہ پارلیمنٹ کو چار دن کی تعطیل تھی۔ نوٹوں کی تنسیخ اور دیگر مسائل پر شوروغل کی وجہ سے پارلیمنٹ میں اب تک کوئی کارروائی نہیں ہوسکی۔ دریں اثناء کانگریس، سماج وادی پارٹی اور بہوجن سماج پارٹی نے الزام عائد کیا کہ نوٹوں کی تنسیخ کی تبدیلی کے ذریعہ مودی ملک کو تبدیل کرنا چاہتے ہیں۔ یہ دروغ بیانی ہے جبکہ بی جے پی نے دعویٰ کیا کہ اپوزیشن کے الزامات بے بنیاد ہیں کہ پارلیمنٹ میں اپوزیشن کو آواز اٹھانے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے۔ بی جے پی نے کہا کہ اس سے بڑا جھوٹ اور کوئی نہیں ہوسکتا۔ مرکزی وزیر پرکاش جاؤدیکر نے بھی ایک خبر رساں چیانل کے اسٹنگ آپریشن کا جو مبینہ طور پر حریف پارٹیوں کے چند قائدین کو پیش کیا گیا تھا جنہوں نے مبینہ طور پر پرانی کرنسی نوٹس، کمیشن کے معاوضہ میں تبدیل کروانے کا پیشکش کیا تھا، کانگریس ، سماج وادی پارٹی اور بہوجن سماج پارٹی پر تنقید کرتے ہوئے بی جے پی نے راہول گاندھی کی مذمت کی اور کہا کہ انہیں کل ہند کانگریس کمیٹی کا نام بدل کر کل ہند کرنسی کنڈیوٹ رکھ دینا چاہئے۔ اسٹنگ آپریشن نے ان تمام پارٹیوں کا اصلی چہرہ بے نقاب کردیا ہے۔ بی جے پی نے دعویٰ کیا کہ وزیراعظم درحقیقت ملک کو تبدیل کرنا چاہتے ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT