Saturday , September 23 2017
Home / Top Stories / وزیر خارجہ امریکہ کی صدر فلسطینی اتھارٹی سے ملاقات

وزیر خارجہ امریکہ کی صدر فلسطینی اتھارٹی سے ملاقات

اسرائیل اور اردن مسجد اقصیٰ میں کشیدگی دور کرنے کوشاں  : جان کیری ‘ تشدد کا سلسلہ جاری
عمان ۔ 25اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیر خارجہ امریکہ جان کیری نے آج صدر فلسطینی اتھارٹی محمود عباس سے ملاقات کی تاکہ مہلک اسرائیل ۔ فلسطین تشدد کا سلسلہ ختم کرنے کیلئے زور دیا جاسکے ۔ عمان میں مذاکرات میں محمود عباس نے اسرائیل سے مسجد اقصیٰ کے احاطہ میں صیانتی انتظامات کا تیقن حاصل کرنے کی کوشش کی ۔ مسجد اقصیٰ گذشتہ چند دن سے مقبوضہ مغربی کنارہ میں بے چینی کا مرکز بناہوا ہے ۔ ایک فلسطینی نے مغربی کنارہ میں اسرائیلی چوکیدار کو چاقو زنی کی کوشش کی تھی لیکن ہلاک کردیا گیا ۔ جان کیری نے وزیراعظم اسرائیل بنجامن نتن یاہو سے جمعرات کے دن برلن میں ملاقات کی تھی ۔ بعدازاں وہ شاہ اردن عبداللہ ثانی سے ملاقات کیلئے مسجد اقصیٰ کے احاطہ کے دورہ پر گئے ۔ وزیرخارجہ امریکہ اور صدر فلسطینی اتھارٹی دونوں نے محتاط پُرامید موقف ظاہر کیا ۔ ایک دن قبل 80سے زیادہ افراد فلسطینی عوام اور اسرائیلی فوجیوں کے درمیان مقبوضہ مغربی کنارہ اور غزہ پٹی میں جھڑپوں کے دوران زخمی ہوگئے تھے ۔ جان کیری نے اخباری نمائندوں سے کہاکہ انہیں اُمید ہے کہ تنازعہ کی یکسوئی ہوجائے گی تاہم انہوں نے تفصیلات کا انکشاف نہیں کیا ۔ محمود عباس نے کہاکہ انہیں ابھی امید تشدد کی تازہ ترین لہر مسجد اقصیٰ کے موقف کے سلسلہ میں شروع ہوئی ہے ۔ اس مسجد کے سلسلہ میں یہودیوں اور مسلمانوں میں برسوں سے تنازعہ جاری ہے ۔نتن یاہو نے کئی بار محمود عباس پر تشدد کے شعلے بھڑکانے کا الزام عائد کیا جبکہ محمود عباس نے  دعویٰ کیا کہ اسرائیلی مسجد اقصیٰ کے موقف کو تبدیل کرنا چاہتا ہے ۔

یہودیوں کو مسجد اقصیٰ کی دورہ کی اجازت ہے تاہم عبادت کرنے کی اجازت نہیں ۔ فلسطین کے مذاکرات کار الہ صائر اراکات نے آج کہا کہ وزیراعظم اسرائیل نے مسجد اقصیٰ کا موقف تبدیل کردیا ہے ۔ یہی وجہ ہے کہ وہ اور اردن امریکہ سے خواہش کررہے ہیں کہ موقف کو دوبارہ قائم کیا جائے ۔ شاہ اردن مسجد اقصیٰ کے متولی ہے اور وہ نتن یاہو کو اس کے موقف کا استحصال کرنے کی اجازت نہیں دیں گے ۔ محمود عباس کی جان کیری سے ملاقات کے بعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صائر اراکات نے کہا کہ بین الاقوامی برادری بھی تشدد کی لہر روکنا چاہتی ہے ۔ کیونکہ اندیشہ ہے کہ اس کے نتیجہ میں تیسرا فلسطینی انتفاضہ شروع ہوجائے گا ۔ جان کیری نے وزیر خارجہ روس سرجیلاروف ‘ یوروپی یونین کی خارجہ پالیسی کے شعبہ کی سربراہ فریڈریکا موغرینی اور اقوام متحدہ کے معتمد عمومی بانکی مون کے علاوہ مشرقی وسطیٰ میں بحال امن کے ذمہ دار چار ممالک کے نمائندوں سے اپیل کی کہ وہ ویانا میں کل کی بات چیت کے بعد اعظم ترین صبر و تحمل اختیار کریں ۔  ان تمام افراد نے اسرائیل سے بھی اپیل کی کہ اردن کے ساتھ تعاون کرے جو تاریخی اعتبار سے مسجد اقصیٰ کا متولی ہے ۔ مسجد اقصیٰ کے بارے میں کشیدگی کا آغاز چاقوزنی کے حملوں ‘ فائرنگ اور کاروں کے تصادم کے بعد ہوگیا تھا ۔ جاریہ ماہ کے آغاز سے ہی 50فلسطینی اور اسرائیلی عرب جھڑپوں کے دوران ہلاک ہوگئے ہیں ۔ 8 اسرائیلی حملوں کے دوران ہلاک کردیئے گئے ۔ ایک اسرائیلی اور ایک اریٹیریا کا شہری بھی حملوں میں کئے گئے ۔ اُن پر غلطی سے حملہ آور ہونے کا شبہ کیا گیا تھا ۔ دریں اثناء عمان سے موصولہ اطلاع کے بموجب وزیراعظم اسرائیل بنجامن نتن یاہو نے وزیر خارجہ امریکہ سے اتفاق کیا ہے کہ مسجد اقصیٰ میں کشیدگی پر قابو پانے کیلئے سی سی ٹی وی کیمرے نصب کئے جائیں گے ۔ دریں اثناء یروشلم سے موصولہ اطلاع کے بموجب ایک فلسطینی نے اسرائیلی چوکی پر مقبوضہ مغربی کنارہ میں ایک چوکیدار پر حملہ کی کوشش کی تھی لیکن اسے ہلاک کردیا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT