Sunday , September 24 2017
Home / Top Stories / وزیر دفاع کے مالی اختیارات میں چار گنا اضافہ

وزیر دفاع کے مالی اختیارات میں چار گنا اضافہ

نئی دہلی ،10فروری(سیاست ڈاٹ کام)وزیر اعظم نریندر مودی نے وزیردفاع منوہر پریکر کے مالی اختیارات میں چار گنا اضافہ کرتے ہوئے ہتھیاروں کی خرید کے سودوں میں 500کروڑ روپے کی حد کو بڑھاکر 2000کروڑ روپے کردیا ہے اور ایسے سودوں میں مسٹر پریکر خود اپنی سمجھ بوجھ سے فیصلہ کرنے کے قابل ہوں گے ۔وزارت دفاع کے ذرائع نے آج یواین آئی کو بتایا کہ یہ فیصلہ حال ہی میں کابینہ کے دفاعی امور کی کمیٹی (سی سی ایس) کی میٹنگ میں کیا گیا، جس کی صدارت وزیر اعظم نے کی تھی۔ اس فیصلے کے بعد 2000 کروڑ روپے تک کے ہتھیار خرید سودے پر سی سی ایس کی منظوری لینی واجب نہیں ہوگی اور وزیر دفاع کو اس معاملے میں منظوری دینے کا حق حاصل ہو گا۔ اس سے پہلے 500 کروڑ یا اس سے زیادہ کے دفاعی سودوں پر سی سی ایس کی منظوری لینی لازمی تھی۔اس فیصلے کا مقصد دفاعی سودوں میں غیر ضروری طریقہ کار رکاوٹوں کو کم کرنا ہے تاکہ مسلح خدمات کی جدیدکاری کے عمل کو تیز کیا جا سکے ۔ اس بار کے بجٹ میں فوجی دستوں کے لئے 86000 کروڑ روپے سے زیادہ کا انتظام کیا گیا ہے ۔ وزیر دفاع کے مالی اختیارات میں اضافہ ہونے کے بعد اب ہتھیار وں کی خرید سے متعلق 40 سے 50 فیصد تجاویز سی سی ایس کے سامنے رکھے جانے کی ضرورت نہیں ہے ۔ذرائع نے بتایا کہ وزارت دفاع میں فی الحال 2000 کروڑ روپے یا اس سے کم کے کئی تجویز زیر غور ہیں اور اب وزیر دفاع کے مالی اختیارات میں اضافہ ہونے کے بعد ایسی تمام تحریک خود کار طریقے سے تیز رفتاری کے ساتھ نمٹ جائیں گے ۔

TOPPOPULARRECENT