Monday , September 25 2017
Home / شہر کی خبریں / وشاکھاپٹنم میں پٹرولیم یونیورسٹی کا سنگ بنیاد

وشاکھاپٹنم میں پٹرولیم یونیورسٹی کا سنگ بنیاد

آندھرا پردیش میں برقی کٹوتی کی شکایت نہیں ، چندرا بابو نائیڈو کا خطاب

حیدرآباد۔20 اکتوبر (سیاست نیوز) چیف منسٹر آندھرا پردیش چندرا بابو نائیڈو نے وشاکھاپٹنم کے ’’سباورم‘‘ کے ونگلی میں پٹرولیم یونیورسٹی کا سنگ بنیاد رکھا اور پھر ایک ترقیاتی ادارہ کا افتتاح بھی کیا۔ اس موقع پر منعقدہ جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر نے کہا کہ ریاست میں کہیں بھی برقی کٹوتی نہیں ہے اور ریاست میں 110 میونسپلٹیز او ڈی ایف کی حیثیت سے اعلان کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ وشاکھاپٹنم کے مختلف مقامات پر پٹرولیم شعبہ میں 1.22 لاکھ کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری کی جارہی ہے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ دنیا کی تمام نظریں ہندوستان پر لگی ہوئی ہیں تو ملک بھر کی نظریں ہم (آندھرا پردیش) پر لگی ہوئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شہر وشاکھاپٹنم میں اب تک ہی 8 انفارمیشن ٹیکنالوجی ادارہ قائم کئے جاچکے ہیں اور مزید ادارے قائم کئے جانے والے ہیں۔ چیف منسٹر نے اپنے اس عزم کا اظہار کیا کہ سبرم ایجوکیشن ہب کے طور پر ترقی حاصل کرے گا اور ریاست میں تمام تعلیمی اداروں کو مفت وائی فائی سہولتیں فراہم کئے جائیں گے۔ چیف منسٹر کہا کہ ہر ہفتہ عوام کے درمیان جاکر سوچھ بھارت کے تعلق معلومات میں ہر روز اضافہ کرنے کے اقدامات کئے جائیں گے۔ اس موقع پر مرکزی وزیر پٹرولیم دھرمیندر پردھان نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ 35 ہزار کروڑ روپئے کی سرمایہ کاری کے ذریعہ بہت جلد پیٹرو کیمیکل کامپلیکس کیلئے سنگ بنیاد رکھیں گے اور پٹرولیم یونیورسٹی میں تعلیم پاتے ہوئے تمام افراد کو صد فیصد ملازمت حاصل ہوگی۔ مرکزی وزیر نے بیرونی ممالک میں پٹرولیم شعبہ میں تعلیم حاصل کرنے والے نوجوانوں سے ملاقات کی اور کہا کہ پٹرولیم شعبہ میں آندھرا پردیش ہب میں تبدیل ہونے کا اعلان کیا۔ دھرمیندر پردھان نے کہا کہ پٹرولیم یونیورسٹی میں عالمی ممتاز ماہرین تربیت دیں گے۔ مرکزی وزیر اطلاعات و نشریات اور شہری ترقیات ایم وینکیا نائیڈو نے اس جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مرکزی حکومت کے تعاون سے آندھرا پردیش روشنیوں کا شہر بن گیا ہے لہذا آئندہ سال تک کسی ایک گھر میں دھویں کا چولہا نہیں رہنا چاہئے اور اس طرح مرکزی حکومت ہر گھر کیلئے گیاس سیلنڈر فراہم کرنے کے اقدامات کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ 1.20 لاکھ کروڑ روپیوں کی سرمایہ کاری ہونے پر آندھرا پردیش کی تصویر ہی مکمل بدل جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT