Thursday , September 21 2017
Home / اضلاع کی خبریں / وعدوں سے انحراف کا ٹی آر ایس حکومت پر الزام

وعدوں سے انحراف کا ٹی آر ایس حکومت پر الزام

گمبھی راؤ پیٹ ۔16جنوری ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) انتخابی مہم کے دوران عوام سے کئے گئے وعدوں سے منحرف کا تلنگانہ حکومت پر صدر ضلعی کانگریس کریم نگر کٹکم مرتنجیم نے الزام عائد کیا ۔ آج وہ یہاں اپنے فارم ہاؤس پر الکٹرانک ‘ پرنٹ میڈیا کو مخاطب کررہے تھے ۔ انہوں نے ریاست کی موجودہ حکومت کو اپنی شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ حکومت اور اس کے ریاستی وزار نت نئے اسکیمات کو روبہ عمل لاتے ہوئے کروڑوں روپئے برباد کررہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ مشن کاکتیہ کے نام پر تالابوں کی مرمت کے بجائے تالابوں کے پشت کو مزید کمزور کردیا ۔ اس اسکیم کے نام پر صرف اور صرف کنٹراکٹر یا تو پھر پارٹی قائدین کو فائدہ پہنچا۔ انہوں نے کہا کہ زرعی ضرورت کی تکمیل کیلئے حکومت خاطر خواہ برقی سربراہی کے بلند بانگ دعوے کررہی ہے جبکہ اس کے برعکس ریاست میں بارش کی کمی ‘ زمین میں پانی کی عدم موجودگی کی وجہ زرعی سرگرمیاں متاثر ہیں ۔ ایسی صورت میں کاشتکاروںکو برقی کی سربراہی بے معنی رکھتی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کے برسراقتدار آتے ہی دلتوں کو 3 ایکڑ اراضی دینے کا کے سی آر نے وعدہ کیا تھا ۔ آج حکومت برسراقتدار آکر کئی ماہ گذر چکے ہیں دلتوں کو تین ایکڑ اراضی کی فراہمی تو دور کی بات ہے لیکن انہیں تین گنٹے زمین بھی مہیا نہیں کی گئی ۔ انہوں نے کہا کہ نرمال کے اپر مانیر پراجکٹ میں پانی لانے کے منصوبہ میں اور اس کے نقشہ میں حکومت تبدیلی کرتے ہوئے تاخیر کررہی ہے جبکہ دوسری جانب پراجکٹ کے کوڈیلی ندی پر چیک ڈیم کی تعمیر کی وجہ پانی کا ذخیرہ ہونے میں دشواری ہوگی ۔ انہجوں نے ریاست تلنگانہ نئے تشکیل دیئے جانے والے اضلاع کا ذکر کیا اور کہا کہ ایک طرف کے سی آر کی بیٹی کویتا جگتیال کو جبکہ ان کے بھانجے ہریش راؤ سدی پیٹ کو نئے اضلاع میں شامل کرنے کا علان کرچکے ہیں ۔ حلقہ اسمبلی سرسلہ جو کریم نگر ضلع میں شامل ہے جس کی نمائندگی ریاستی وزیر کے ٹیآر کرتے ہیں کو سدی پیٹ ضلع میں شامل کئے جانے کی امید نظر آرہی ہے ۔ مرتنجیم نے کہا کہ وہ بہرصورت سرسلہ کو سدی پیٹ ضلع میں شامل کرنے سے روکنے کیلئے عوامی سطح پر احتجاج کریں گے ۔ انہوں نے کے ٹی آر سے سوال کیا کہ وہ اس حلقہ کی نمائندگی کرتے ہیں اورجبکہ یہاں کی عوام ووٹ حاصل کرتے ہوئے کامیابی حاصل کی اور انہی کے علاقے کو سدی پیٹ ضلع میںملانے پر خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں ۔ مرتنجیم نے حلقہ اسمبلی سرسلہ کی عوام کی جانب سے کے ٹی آر سے مطالبہ کیا کہ وہ حلقہ اسمبلی سرسلہ کو ضلع کریم نگر میں ہی برقرار رکھے ‘ ورنہ عوام اس کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کرے گی ۔ اس موقع پر پارٹی قائدین یگادنڈی سوامی ‘ محمد حمید الدین خالد ‘ مراٹھی راجو ‘ سید غاضی الدین زبری ‘ چندرم ‘کرشنا ریڈی ‘ سائی ریڈی ‘ نصرت اللہ وغیرہ موجود تھے ۔

TOPPOPULARRECENT