Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / وقت اور بدلتے حالات کیساتھ چلنے والی قوموں کا تابناک مستقبل

وقت اور بدلتے حالات کیساتھ چلنے والی قوموں کا تابناک مستقبل

تحفظات سے استفادہ پر زور، عبدالجبار خان کیاش گرانٹ کی تقسیم، جناب عامر علی خان، امجداللہ خان و دیگرکا خطاب

حیدرآباد۔ 17جولائی(سیاست نیوز) چودہ سو سال قبل پیغمبر اسلامؐ نے دنیاکو ایک ایسا ٹائم مینجمنٹ دیا ہے جس پر عمل کرتے ہوئے نہ صرف تعلیمی اور اخلاقی پستی کو دور کیاجاسکتا ہے بلکہ اس کی بڑھتی معاشرتی برائیو ں کا بھی خاتمہ یقینی ہے اور اس کام کے لئے نوجوان نسل کو آگے آنے اور نمازوں کی پابندی کرتے ہوئے مذہب اسلام کے ٹائم مینجمنٹ کا حصہ بننے کی ضرورت ہے ۔ نیوز ایڈیٹر روزنامہ سیاست جناب عامر علی خان نے ادارۃ العلم مہدویہ لائبریری کے زیراہتمام انٹرمیڈیٹ اور ایس ایس سی میںدرجہ اول دوم اور سوم کے نشانات حاصل کرنے والے مہدوی طلبہ وطالبات میںآٹھویں عبدالجبار خان کیش گرانٹ کی تقسیم کے موقع پر مہمانِ خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے ان خیالات کا اظہار کیا۔جناب عبدالجبار خان نے صدارت کی جبکہ سکریٹری ادارۃ العلم مہدویہ لائبریری حضرت سید حسین میراں‘ امجد اللہ خان خالد سابق کارپوریٹر ‘ پرنسپل چیتنیا کالج پروفیسر روی کمار‘ لکچررنارائنہ کالج مسٹر پرساد اور دیگر نے شرکت کی ۔ کنونیر تقریب جناب اقبال علی خان نے نظامت کے فرائض انجام دئے ۔ اپنے سلسلے خطاب کو جاری رکھتے ہوئے جناب عامر علی خان نے کہاکہ دین حق پر چلتے ہوئے موجودہ دور کی ضرورتوں کی مناسبت سے تعلیم پر توجہہ مرکوز کرنا چاہئے ۔ انہوں نے کہاکہ آج ہر نوجوان لڑکا ہو یا لڑکی یا تو ڈاکٹر یاپھر انجینئر بننے کی کوشش میں ہے مگر ڈاکٹر اور انجینئر کے لئے جہاں پانچ اور چار سال کا وقت لگتا ہے وہیں پر میڈیکل اور انجینئرنگ کے طالب علم آئی اے ایس اور آئی پی ایس کے مسابقتی امتحانات میںبھی حصہ لے سکتے ہیں۔ جناب عامر علی خان نے کہاکہ اس کے علاوہ گروپ I اور گروپ II کے مسابقتی امتحانات بھی نوجوانو ں کے بہتر مستقبل کی ضمانت ہیں ۔ سرکاری ملازمتوں سے مسلم نوجوانوں کی بیزارگی پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ تلنگانہ کیڈرس سے آج دویا تین آئی اے ایس آفیسر ہیںجبکہ ایک ہی آئی پی ایس عہدیدار ہیں جو جاریہ سال ڈسمبر میں ریٹائرڈ ہوجائیںگے ۔ جناب عامر علی خان نے مزیدکہاکہ سکریٹریٹ میں مسلم آئی اے ایس عہدیداروں کا فقدان قوم او رملت کا بڑا نقصان ہے ۔جناب عامر علی خان نے بتایا کہ ایک لاکھ سے زائد مخلوعہ سرکاری جائیدادوں پر تقررات عمل میںآنے والے ہیںایسے میں گروپ I اورگروپ II امتحانات میں مسلم طلبہ وطالبات کی حصہ داری ریاست تلنگانہ میںایک بڑے انقلاب کا نقیب ثابت ہوگی۔جناب عامر علی خان نے کہاکہ ایم آر اویز کی جائیدادوں پر مسلم نوجوانوں کا تقرر پوری قوم کے لئے فائدہ مند ثابت ہوگا۔انھوںنے ایس ایس سی اور انٹر میڈیٹ میںکامیابی حاصل کرتے ہوئے عبدالجبار خان کیش گرانٹ کا حقد ار بننے والے طلبہ وطالبات کو میڈیکل او رانجینئرنگ کے علاوہ بائیو ٹکنالوجی میںبھی اپنا مستقبل تلاش کرنے کا مشورہ دیا۔اس کے لئے ایک اور ذہنی تربیت’’برین ٹرین‘‘ کی قوم کو ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہاکہ وقت او ر بدلتے حالات کے ساتھ چلنے والی قوموں کامستقبل تابنا ک ہوتا ہے ۔ انہوں نے لڑکیوں کو اس میںآگے بڑھ کر حصہ لینے اور آئی اے ایس ‘ آئی پی ایس کے علاوہ گروپ ون گروپ ٹو کے مسابقتی امتحانات کاحصہ دار بننے کا مشورہ دیا۔ انہوں نے کہاکہ خواتین کے لئے 33فیصد کوٹہ مختص کیاگیا ہے جس سے وہ آسانی کے ساتھ مذکورہ مسابقتی امتحانات میںمنتخب ہوسکتی ہیں۔ چیف منسٹر کے چندرشیکھر رائو نے بہت جلد بی سی کمیشن کے قیام او ربارہ فیصد تحفظات کی فراہمی کا وعدہ کیااور ہمیںامید ہے کہ وہ ضرور اپنا وعدہ نبھائیںگے مگر بارہ فیصد تحفظات کی فراہمی تک چار فیصد تحفظات سے استفادہ کرنے کی ہمیں ضرورت ہے تاکہ سرکاری ملازمتوں میں مسلمانوں کی کم تعداد کودور کیا جاسکے ۔انہوں نے کہاکہ رات میں آرام اور دن میںکام و پڑھائی کے نظام کو ہمارے معاشرے میںرائج کرنا ضروری ہے تاکہ ایک ترقی یافتہ قوم کی حیثیت سے ہماری پہچان بن سکے ۔ جناب عبدالجبار خان نے اپنے صدارتی خطاب میںاعلان کیا کہ اگر مہدوی لڑکے اور لڑکیاں ا ٓئی اے ایس‘ آئی پی ایس کی تربیت حاصل کرنا چاہتے ہیں تو وہ ان کی مکمل مالی مدد کریں گے ۔ انہوں نے کہاکہ میری خواہش ہے کہ ہر نوجوان لڑکا اور لڑکی تعلیم یافتہ ہو۔ نوے فیصد نشانات حاصل کرنے میںہمارے نوجوانوں کا مظاہرہ قابل ستائش ہے ۔ امجد اللہ خان خالد نے ادارۃ العلم مہدویہ عبدالجبار خان کیش گرانٹ کے تمام منتخب طلبہ کو مبارکباد پیش کی۔ بعدازاں جناب عامر علی خان کے ہاتھوں انٹرمیڈیٹ میں اول آنے والی طالبہ جویریہ بنت افضل خان کو پچیس ہزار ‘ دوم ‘ ماہین ترنم کوپندرہ اور ایک طالب علم عبدالرحیم کو دس ہزار روپئے نقد دئے گئے جبکہ بسٹ ٹیچر اور لکچرر کیلئے پروفیسر روی کمار اور مسٹر پرساد کو اسناد کے علاوہ دس ہزار روپئے فی کس کے علاوہ ایس ایس سی میں دس گریڈ حاصل کرنے والی طالبہ ماریہ نصرت بنت سید نصرت کو پچیس ہزار اور سیدہ صفہ نورین بنٹ ڈاکٹر سیدعامر مہدی کو پانچ او ر سوم کی طالبہ جویریہ نصرت بنت سید نصرت کو بھی پانچ ہزار روپئے کے نقد انعامات پیش کئے گئے۔ہرسال کی طرح اس سال بھی ادارۃ العلم مہدویہ لائبریری کی جانب سے عبدالجبار خان کیش گرانٹ برائے قرات مقابلوں میںسید نظام الدین اشرفی ‘ عبدالرحیم رفیع‘ محمدارحم مکرم اور کمسن قاری محمد ایان بیگ کو بھی بالترتیب پانچ ہزار روپئے نقد انعامات سے نواز ا گیا۔ سکریٹری ادارۃالعلم مہدویہ لائبریری حضرت سید حسین میراں خوندمیری نے ادارہ کی مشتمل رپورٹ پیش کی۔ سابق معتمد مرکزی انجمن مہدویہ جناب صادق محمد خان‘ نعمت علی خان علی میاں‘ سید اقبال انجینئر کے علاوہ معززین او راولیاء طلبہ نے بھی شرکت کی ۔

TOPPOPULARRECENT