Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / وقف بورڈ سرگرمیوں میں ارکان کو نظر انداز کرنے کا الزام

وقف بورڈ سرگرمیوں میں ارکان کو نظر انداز کرنے کا الزام

عرس حضرات یوسفینؒ میں عدم مدعو ، عہدیداروں کے رویہ کی مذمت ، ایم اے وحید
حیدرآباد ۔ 28 ۔ اگست (سیاست نیوز) تلنگانہ وقف بورڈ کے رکن ایم اے وحید ایڈوکیٹ نے بورڈ کی سرگرمیوں میں ارکان کو نظرانداز کرنے کی شکایت کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ درگاہ حضرات یوسفینؒ کے عرس کے سلسلہ میں ان کے بشمول بورڈ کے کسی بھی رکن کو مدعو نہیں کیا گیا۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ایم اے وحید نے کہا کہ درگاہ یوسفین کے انتظامات کو وقف بورڈ کی راست نگرانی میں لئے ایک عرصہ ہوچکا ہے لیکن آج تک وہاں کے انتظامات کے سلسلہ میں ارکان کو اطلاع نہیں دی گئی اور نہ ہی بورڈ کی دیگر سرگرمیوں سے واقف کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عرس تقاریب کے سلسلہ میں نہ ہی انہیں اطلاع دی گئی اور نہ دعوت نامہ جاری کیا گیا۔ چیف اگزیکیٹیو آفیسر اور دیگر عہدیداروں کے رویہ کے بارے میں شکایت کرتے ہوئے ایم اے وحید نے کہا کہ عہدیداروں کا رویہ قابل مذمت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ صدرنشین وقف بورڈ تقریباً 10 مرتبہ دورہ کرچکے ہیں لیکن کسی بھی بورڈ ممبر کو دورہ میں شامل نہیں کیا گیا ۔ عرس تقاریب کے پاسس شہر کے بیشتر افراد کو جاری کئے گئے لیکن وقف بورڈ کے ارکان اس سے محروم ہیں۔ ایم اے وحید نے کہاکہ وہ چاہتے ہیں کہ وقف بورڈ کے تمام ارکان کو اعتماد میں لیکر کارکردگی کو آگے بڑھایا جائے ۔ اسی دوران چیف اگزیکیٹیو آفیسر کی جانب سے 21 اگست کو سرکولر جاری کیا گیا جس میں بورڈ کے تمام عہدیداروں اور ملازمین کو حضرات یوسفینؒ کے عرس میں شرکت کی ہدایت دی گئی ہے۔ صندل جلوس میں شرکت کیلئے پابند کیا گیا اور عدم شرکت کی صورت میں تادیبی کارروائی کی دھمکی دی گئی ہے۔ اس سرکولر میں تمام عہدیداروں بشمول اگزیکیٹیو آفیسرس، سپرنٹنڈنٹس سینئر اسسٹنٹس ، جونیئر اسسٹنٹس ، اگزیکیٹیو اسٹاف ، ٹیکنیکل اسٹاف اور آفس سب آرڈینیٹس کو یہ ہدایات دی گئی ہیں۔ یہ پہلا موقع ہے جب وقف بورڈ کا سارا عملہ عرس کی تقاریب میں بہ نفس نفیس شریک ہوگا اور انہیں دوپہر سے گھر جانے کی اجازت دی گئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT