Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / وقف بورڈ میں ملازمین کے تقررات اور بے قاعدگیوں کی سی بی سی آئی ڈی تحقیقات پر غور

وقف بورڈ میں ملازمین کے تقررات اور بے قاعدگیوں کی سی بی سی آئی ڈی تحقیقات پر غور

دھاندلیوں اور خرابیوںکو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ صدرنشین الحاج محمد سلیم کا بیان
حیدرآباد۔/12ستمبر، ( سیاست نیوز) صدر نشین تلنگانہ وقف بورڈ محمد سلیم نے کہا کہ ملازمین کے تقررات اور دیگر بے قاعدگیوں کی ضرورت پڑنے پر سی بی سی آئی ڈی اور ویجلینس ڈپارٹمنٹ سے تحقیقات کرائی جائیں گی اور جو بھی غیر قانونی طور پر پائے جائیں گے انہیں خدمات سے علحدہ کردیا جائے گا۔ اسمبلی کی اقلیتی بہبود کمیٹی میں وقف بورڈ کی مختلف بے قاعدگیوں اور خاص طور پر ملازمین کے تقررات میں دھاندلیوں کا مسئلہ اٹھایا گیا تھا۔ بورڈ کی جانب سے پیش کردہ رپورٹ میں یہ اعتراف کیا گیا کہ کئی ملازمین کم قابلیت کے باوجود بھاری تنخواہیں حاصل کررہے ہیں۔ اس کے علاوہ اقرباء پروری کی کئی مثالیں ہیں۔ محمد سلیم نے اس مسئلہ پر آج بورڈ کے اعلیٰ عہدیداروں سے مشاورت کی۔ انہوں نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے واضح کیا کہ کسی بھی بے قاعدگی کو برداشت نہیں کیا جائے گا اور تحقیقات میں جو بھی عہدیدار یا ملازم غیر قانونی طور پر پائے جائیں انہیں خدمات سے برطرف کرنے میں بورڈ کوئی تامل نہیں کرے گا۔ محمد سلیم نے کہا کہ 14 ستمبر کو منعقد ہونے والے بورڈ کے اجلاس میں ان مسائل کو پیش کرتے ہوئے ارکان سے رائے حاصل کی جائے گی۔ محمد سلیم نے کہا کہ صدرنشین کی حیثیت سے جائزہ حاصل کئے ابھی6 ماہ ہوئے ہیں اور وہ بورڈ میں اصلاحات کیلئے کئی قدم اٹھارہے ہیں۔ جہاں کہیں بھی بے قاعدگیوں کا پتہ چلا انہوں نے کسی مروت کے بغیر سخت کارروائی کی۔ انہوں نے کہا کہ سابق میں جس انداز میں تقررات کئے گئے اس کی جانچ کی جائے گی۔ انہوں نے مثال دی کہ بورڈ کے ایک ڈرائیور کی تنخواہ ماہانہ 55 ہزار ہے۔ انہوں نے اس معاملہ کی تمام تفصیلات طلب کی ہیں۔ محمد سلیم نے کہا کہ بورڈ بے قاعدگیوں کے سلسلہ میں جو بھی فیصلہ کرے گا اس پر عمل آوری کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ بورڈ میں اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کے بجائے قابضین سے ملی بھگت کے ذریعہ بھاری رقومات حاصل کرنے کی شکایات ملی ہیں۔ اس طرح کے عہدیداروں اور ملازمین پر اینٹی کرپشن بیورو کے ذریعہ گرفت کی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ جب وہ پہلی مرتبہ وقف بورڈ کے صدرنشین تھے تو انہوں نے ایک ڈپٹی سکریٹری کو اینٹی کرپشن کے ذریعہ رنگے ہاتھوں گرفتار کرایا تھا۔ محمد سلیم نے کہا کہ وہ اللہ کی رضا اور خوشنودی کیلئے پوری ایمانداری اور دیانتداری کے ساتھ خدمت انجام دینے کے جذبہ کے تحت کام کررہے ہیں اور جو کوئی بھی بورڈ کے مفادات کے خلاف کام کرے گا اسے بخشا نہیں جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کل 13 ستمبر کو انہوں نے تمام عہدیداروں اور ملازمین کا اجلاس طلب کیا ہے جن میں ریٹائرڈ عہدیدار اور عارضی ملازمین بھی شامل ہیں۔ وہ جاننا چاہتے ہیں کہ کس کی کیا قابلیت ہے اور کون کس کا رشتہ دار ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام ملازمین کے تقررات اور ان کی تنخواہوں کے تعین کے معاملات کی جانچ کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ 6 ماہ کے دوران اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کے سلسلہ میں انہوں نے خصوصی دلچسپی لی ہے۔ کئی جائیدادوں کا انہوں نے بذات خود دورہ کرتے ہوئے غیر مجاز قبضوں کو برخواست کرایا۔ انہوں نے کہا کہ گٹلہ بیگم پیٹ میں غیر مجاز تعمیرات جاری رہنے کی شکایت پر وقف بورڈ کی ٹاسک فورس ٹیم روانہ کی جارہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ راجندر نگر میں پہاڑی میر محمودؒ کی اوقافی اراضی پر ناجائز قبضوں کی برخواستگی میں انہیں کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عدالتی مقدمات کی یکسوئی کے سلسلہ میں اسٹانڈنگ کونسلس کے علاوہ دیگر سینئر وکلاء کی خدمات حاصل کی جارہی ہیں۔ حالیہ عرصہ میں بورڈ نے کئی مقدمات میں کامیابی حاصل کی۔

TOPPOPULARRECENT