Monday , September 25 2017
Home / اضلاع کی خبریں / وقف جائیدادوں کے غیرمجاز قبضوں کی برخاستگی

وقف جائیدادوں کے غیرمجاز قبضوں کی برخاستگی

کریم نگر ۔ 22 نومبر (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) مسلمانوں کو درپیش مسائل اور بالخصوص بزرگوں، شاہی خاندانوں سے مسلمانوں کی مختلف ضرورتوں تعلیم، طبی اور غریب یتیم بے سہارا افراد، ضعیف، بیواؤں کی نگہداشت وغیرہ کیلئے وقف کردہ کروڑوں روپئے کی جائیدادوں پر جس طرح قبضہ کرلیا گیا ہے، اس طرح کے غیرمجاز قابضوں سے ان جائیدادوں کو حاصل کرنے اور منشاء وقف کے مطابق عمل کرنے کیلئے حکومت کو توجہ دلانے، ریاستی وقف بورڈ کو پابندکرنے کیلئے تلنگانہ کے ڈپٹی چیف منسٹر محمود علی سے سکریٹریٹ میں کریم نگر کے ایک وفد نے ملاقات کرتے ہوئے انہیں یادداشت حوالے کی اور وقف جائیدادوں کی نشاندہی کرتے ہوئے کہ کہاں کس نوعیت کی جائیداد خشکی، تری قابل کاشت کمرشیل جائیدادیں ہیں اس کی تفصیل پر مبنی یادداشت پیش کی گئی۔ اس وفد میں وقف پروٹیکشن ڈیولپمنٹ کمیٹی صدر شیخ ابوبکر خالد، سکریٹری محمد ظہور خالد، نائب صدر ایم اے صمد نواب، نمائندہ سیاست سید محی الدین، لاری ڈرائیورس اسوسی ایشن صدر انور اور خادمان ملت کے صدر امجداللہ شریک تھے۔ ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمود علی نے کہاکہ چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ اس تعلق سے کافی غوروفکر کررہے ہیں اور وقف جائیدادوںکو چاہئے کہ کسی بھی سطح کے حامل شخصیتوں کے قبضہ میں ہوں، ان سے حاصل کرتے ہوئے منشاء وقف کے مطابق ان جائیدادوں سے استفادہ کرنے کیلئے مسلمانوں کو حکومت کی جانب ہر طرح کا تعاون دینا چاہتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہاکہ کے سی آر مسلمانوں کی فلاح و بہبود کیلئے ان سے جو بھی ہوسکتا ہے کرنا چاہتے ہیں۔ اسی لئے مسلمانوں کی پسماندگی دور کرنے کیلئے مسلم بچوں کیلئے مفت معیاری تعلیم کیلئے انگلش میڈیم اسکولس کا قیام عمل میں لائے ہیں۔ ان بچوں کے رہنے کھانے کپڑے کتابیں مفت دیتے ہوئے تعلیم کا انتظام کیا ہے۔ ہر بچہ پر حکومت کی جانب سے 80 ہزار روپئے خرچ کئے جارہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT