Wednesday , June 28 2017
Home / شہر کی خبریں / وقف کے مختلف شعبہ جات میں مالیاتی بے قاعدگیوں پر قابو پانے خصوصی توجہ

وقف کے مختلف شعبہ جات میں مالیاتی بے قاعدگیوں پر قابو پانے خصوصی توجہ

زائد رقم کی وصولی کی اطلاع پر صدر نشین وقف بورڈ الحاج محمد سلیم کا سخت نوٹ
حیدرآباد ۔ 3 ۔ مئی (سیاست نیوز) صدرنشین تلنگانہ وقف بورڈ محمد سلیم نے مختلف شعبہ جات میں مالیاتی بے قاعدگیوں پر قابو پانے کیلئے خصوصی توجہ مبذول کی ہے۔ مینٹننس کے مختلف کاموں میں زائد رقومات کی ادائیگی سے متعلق شکایت ملنے پر صدرنشین وقف بورڈ نے متعلقہ امور کے ماہرین کو طلب کرتے ہوئے درکار خرچ کے بارے میں تفصیلات حاصل کی ۔ بتایا جاتا ہے کہ حالیہ عرصہ میں مینٹننس کے نام پر وقف بورڈ میں بھاری رقومات خرچ کی گئیں لیکن مینٹننس کا کام معیاری طور پر انجام نہیں دیا گیا۔ صدرنشین نے اکاؤنٹس ، مینٹننس اور دیگر متعلقہ شعبہ جات کے عہدیداروں اور ذمہ داروں کو طلب کرتے ہوئے متنبہ کیا کہ اگر مالیاتی بے قاعدگیاں کی گئیں تو ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے مینٹننس سیکشن میں بورڈ کی اجازت کے بغیر عارضی تقررات پر بھی اعتراض جتایا اور کہا کہ بورڈ کی منظوری کے بغیر کوئی بھی سیکشن کام نہیں کرسکتا۔ انہوں نے بتایا کہ ٹرانسفارمر اور لفٹ کی درستگی کے سلسلہ میں رقم منظور کی جاچکی ہے ۔ رقم کی منظوری سے قبل ماہرین سے رائے حاصل کی گئی تاکہ وقف بورڈ کی زائد رقم خرچ نہ ہو انہوں نے کہا کہ کوئی بھی عہدیدار یا ملازمین بورڈ کے کاموں میں رقمی بے قاعدگیوں میں ملوث ہوں تو انہیں بخشا نہیں جائے گا ۔ محمد سلیم نے کہا کہ بورڈ کو بے قاعدگیوں سے پاک کرنا ان کی اولین ترجیح ہے اور اس سلسلہ میں ملازمین کے بڑے پیمانہ پر تبادلے عمل میں آئیں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ حج ہاؤز میں موجود دیگر اقلیتی اداروں کے ذمہ داروں کے ساتھ جمعرات کو اجلاس طلب کیا گیا ہے تاکہ وقف بورڈ کو ادا کئے جانے والے کرایے پر بات چیت کی جاسکے۔ بورڈ موجودہ کرایے کو مارکٹ ریٹ کے مطابق مقرر کرنے کا خواہاں ہے۔ واضح رہے کہ عمارت میں آندھراپردیش وقف بورڈ کا دفتر بھی موجود ہے۔ ان کا دعویٰ ہے کہ عمارت کے 55 فیصد وہ شیر ہولڈر ہیں۔ اسی دوران وقف بورڈ میں صرف زبانی احکامات کے نام پر بعض من مانی فیصلوں کی اطلاعات ملی ہیں۔ کئی ملازمین اور عہدیدار تحریری ہدایات کے بغیر اپنی پسند کے سیکشن میں منتقل ہوچکے ہیں ۔ حالانکہ اس سلسلہ میں واضح احکامات کی ضرورت ہے ۔ صدرنشین نے واضح کیا کہ جن ملازمین کے خلاف الزامات کی تحقیقات جاری ہے ، ان کے بارے میں تحقیقات کی تکمیل کے بعد ہی کوئی فیصلہ کیا جائے گا۔ اسی دوران صدرنشین وقف بورڈ نے آج عمارت کی آہک پاشی اور کلرنگ کے کاموں کا جائزہ لیا اور کنٹراکٹر کو ہدایت دی کہ رمضان المبارک کے آغاز تک اس کام کو مکمل کرلیا جائے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT